سعودی سرحدی فوج کے ہاتھوں چار یمنی شہری شہید اور زخمی

یمنی ذرائع کا کہنا ہے کہ شمالی یمنی صوبے صعدہ میں رہائشی علاقوں پر سعودی سرحدی محافظوں کی فائرنگ سے دو شہری ہلاک ہوگئے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ چینل کی رپورٹ کے مطابق یمنی ذرائع نے صوبہ البیضا میں واقع الظاہر کے علاقے پر سعودی اتحادی لڑاکا طیاروں کے حملوں کی اطلاع دی ہےجبکہ ذرائع نے سعودی یمن کی سرحد پر رہائشی علاقوں پر سعودی فوج کے راکٹ اور توپ خانے سے ہونے والے حملوں کا بھی ذکر کیا، رپورٹ کے مطابق یمن کے  شمالی صوبہ صعدہ کے  شدا کے علاقے پر سعودی فوج کے راکٹ اور توپ خانے کے حملے میں دو شہری زخمی ہوگئے۔
درایں اثنا صوبہ صعدہ میں واقع الرقو کے علاقے میں سعودی سرحدی محافظوں کی فائرنگ سے دو یمنی شہری بھی شہید ہوگئے،یادرہے کہ  حال ہی میںصعدہ میں ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل ریسرچ علی صالح فراس  نے المسیرہ کو بتایاکہ  رواں سال (2021) کے پہلے چھ مہینے میں  سعودی اتحاد نے 491 بار اس صوبے کے الراقو علاقے کو نشانہ بنایا ہے۔
  انہوں نے مزید کہاکہ ان حملوں کے نتیجے میں  127 یمنی شہری شہید اور 364 دیگر افراد زخمی ہوئے ہیں نیز ان حملوں کے تنیجہ میں 68 افریقی مہاجرین اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، فراس نے کہا کہ الرقو کے خلاف سعودی اتحاد کی روزانہ جارحیت مضحکہ خیز ہے اور ان وحشیانہ حملوں کا کوئی جواز نہیں ہے،تاہم اقوام متحدہ سمیت پوری عالمی برادری اس جارحیت پر خاموش تماشائی بنی دیکھ رہی ہے یہی وجہ ہے یمنی عوام اپنے خلاف ہونے والے جرائم میں سعودی عرب کے ساتھ  پوری عالمی براداری کو شریک سمجھتی ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین