امریکی تاریخ میں پہلی بار ایک سیاہ فام ڈیموکریٹ پارٹی کا سربراہ

نیو یارک ریاست کے نمائندے حکیم جیفریز کو امریکی ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹس کے نئے رہنما اور نینسی پیلوسی کے جانشین کے طور پر نامزد کیا گیا۔

ولایت پورٹل:اسپوٹنک خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق امریکی ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹک قانون سازوں نے نیویارک ریاست کے نمائندے حکیم جیفریز کو ایوان نمائندگان میں اس جماعت کے ارکان کا سربراہ منتخب کیا، 52 سالہ حکیم جیفریز اس عہدے پر فائز ہونے والے پہلے سیاہ فام امریکی ہیں،وہ اس عہدے پر نینسی پیلوسی کی جگہ لیں گے۔
 امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی نے اس سال نومبر کے آخر میں کہا تھا کہ وہ ایوان میں ڈیموکریٹک پارٹی کی سربراہ کے عہدے سے سبکدوش ہونے کا ارادہ رکھتی ہیں،پیلوسی نے کہا تھا کہ میں کانگریس میں ڈیموکریٹس کی قیادت میں دوبارہ الیکشن نہیں لڑوں  گی۔
انہوں نے مزید کہا کہ یہ وقت ہے کہ نئی نسل ڈیموکریٹک پارٹی کی قیادت سنبھالے، جس کے لیے میں انتہائی احترام کرتی ہوں، میں بہت خوش ہوں کیونکہ بہت سے لوگ یہ بھاری ذمہ داری اٹھانے کے لیے تیار ہیں، اس دوران پیلوسی نے کہا کہ وہ ریٹائر نہیں ہوں گی اور ایوان نمائندگان میں خدمات انجام دیتی رہیں گی۔
 واضح رہے کہ 82 سالہ نینسی پیلوسی موجودہ کانگریس میں ایوان نمائندگان کی سربراہ ہیں؛ لیکن 8 نومبر کو ہونے والے کانگریس کے وسط مدتی انتخابات میں ڈیموکریٹس نے ایوان نمائندگان میں اکثریت کھو دی اور اکثریت ریپبلکن پارٹی کو ملی جس وجہ سے ایوان کا اگلا سپیکر ری پبلکن ہو گا،امریکی ایوان نمائندگان کے اسپیکر کا عہدہ ریاستہائے متحدہ امریکہ میں درجہ بندی کے مطابق تیسرا اہم ترین عہدہ ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین