وادی اردن میں فائرنگ؛2صہیونی فوجی کمانڈر ہلاک

صہیونی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ وادی اردن میں ہونے والے فائرنگ کے ایک واقعے میں دو صہیونی فوجی کمانڈر ہلاک ہوگئے ہیں۔

ولایت پورٹل:عبرانی میڈیا نے بتایا ہے کہ وادی اردن میں جیریکو علاقہ کے قریب دو صہیونی فوجی کمانڈر مارے گئے، میڈیا رپورٹس کے مطابق دونوں فوجی کمانڈر دو صیہونی عسکریت پسند گروپوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں اور غلط شناخت کی وجہ سے مارے گئے۔
 صہیونی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ واقعہ کا مقام وادی اردن میں صیہونی حکومت کے اڈوں میں سے ایک تھا، عبرانی میڈیا کے مطابق صیہونی مسلح افواج کے سربراہ ایویو کوخافی اور اسرائیلی فوج کے ترجمان رون کوخافی بھی واقعے کی تفصیلات جاننے کے لیے علاقے میں گئے۔
قابل ذکر ہےکہ  دونوں صہیونی فوجی Igos نامی یونٹ کے کمانڈر تھے، Igos یونٹ 1993 میں تشکیل دیا گیا تھا، جس کا کام مغربی کنارے کے مختلف حصوں میں گشت کرنا، لوگوں پر فائرنگ کرنا، مسلح گھات لگانا اور رکاوٹیں ایجاد کرنا نیز الاقصی انتفاضہ کے دوران یونٹ کی کارروائیوں کے دوران مرکزی سڑکوں کا معائنہ کرنا شامل تھا۔
واضح رہے کہ  Igos یونٹ کئی دیگر یونٹوں کے ساتھ فلسطینیوں کے گھروں پر چھاپے مارنے اور فلسطینی شہریوں کو اغوا کرنے کی بھی ذمہ دار ہے نیز بنیادی طور پر ٹارگٹ مراکز کے گھات لگانے اور محاصرے کی بھی ذمہ دار ہے۔
درایں اثنا جمعرات کی صبح عبرانی زبان کے ذرائع نے اطلاع دی کہ جیریکو کے قریب ایک فوجی اڈے پر فائرنگ کے نتیجے میں دو صہیونی فوجی کمانڈر زخمی ہوئے ہیں جن کی حالت تشویشناک ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ اس واقعے کا فلسطینی مزاحمتی کارروائیوں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین