عراق میں الحشد الشعبی اور داعش کے درمیان شدید لڑائی

عراق کے شرہ موصل میں الحشد الشعبی فورسز اور داعش دہشت گرد گروہ کی باقیات کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں، جس میں الحشد الشعبی فورسز کے متعدد افراد شہید اور زخمی ہوئے۔

ولایت پورٹل:عراقی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ الحشد الشعبی فورسز اور موصل کے الخدر جزیرے کے علاقے میں ایک سرنگ میں چھپے ہوئے داعش کے متعدد دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ ہوئی جس کے نتیجے میں الحشد الشعبی کے سات افراد شہید اور زخمی ہو گئے۔
الحشد الشعبی کے قریبی ذرائع کے مطابق اس لڑائی میں الحشد الشعبی کی 44ویں بریگیڈ کے کمانڈر کرنل عبدالفتاح البرکی شہید ہو گئے،درایں اثنا عراق کے صوبہ نینوا سے موصول ہونے والی خبروں سے معلوم ہوتا ہے کہ لڑائی کی شدت اس قدر ہے کہ عراقی فوج بھی اس لڑائی میں داخل ہوئی اور علاقے میں داعش کی کم از کم ایک گاڑی کو نشانہ بنایا۔
 عراقی میڈیا کے مطابق اس کارروائی میں داعش کے کم از کم 11 دہشت گرد مارے گئے، نیز الحشد الشعبی کے نینوی آپریشن کے کمانڈ اسٹاف کے سربراہ نے براہ راست اس آپریشن کی کمان سنبھالی ہے اور صحرائے نینوی کی گہرائیوں میں داعش کے دہشت گردوں کا تعاقب جاری ہے جبکہ امدادی دستے بھی علاقے میں بھیجے گئے ہیں، تاہم تاحال لڑائی جاری ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین