آئندہ فلسطینی انتخابات میں حماس کی ممکنہ کامیابی سے صیہونیوں میں خوف وہراس

مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں اسرائیلی کابینہ کے کوآرڈینیٹر نے آئندہ فلسطینی انتخابات میں اسلامی مزاحمتی تحریک (حماس) کی کامیابی سے خبردار کیا۔

ولایت پورٹل:اناطولی نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں صیہونی حکومت کے کوآرڈینیٹر ، کمال ابو رکن نے آئندہ فلسطینی انتخابات میں اسلامی مزاحمتی تحریک (حماس) کی فتح سے خبردار کیا، انہوں نے دھمکی دی کہ اگر حماس نے فلسطینی پارلیمانی انتخابات میں کامیابی حاصل کی تو وہ فلسطینی اتھارٹی سے تعلقات منقطع کردیں گے۔
 ابو رکن نے فلسطینی اتھارٹی کی طرف سے فلسطینی پارلیمانی انتخابات کے انعقاد کوہی ایک بڑی غلطی قرار دیا، مقبوضہ فلسطین کے علاقوں میں صیہونی حکومت کی کابینہ کے کوآرڈینیٹر نے مزید کہاکہ اس بات کا زیادہ امکان ہے کہ حماس فلسطینی پارلیمانی انتخابات میں کامیابی حاصل کر لے گی، ابو رکن نے زور دے کر کہاکہ  میں اسرائیلی سیاسی عہدیداروں کو مشورہ دیتا ہوں کہ یروشلم میں انتخابات نہ ہونے دیں۔
واضح رہے کہ  فلسطین اتھارٹی کے صدر محمود عباس کے بیان کے مطابق  فلسطینی پارلیمانی انتخابات 22 مئی کو اور صدارتی انتخابات 31 جولائی کو ہوں گے نیزاگر قانون سازکونسل کے انتخابات دوسرے مرحلے تک ملتوی نہیں ہوئے تو قومی اسمبلی کے انتخابات  31 اگست کو ہوں گے،یادرہے کہ  پہلے صیہونی حکام یہ کوشش کررہے تھے کہ حماس آئندہ فلسطینی انتخابات میں حصہ ہی نہ لے اس لیے کہ انھیں معلوم تھا کہ اگر حماس میدان میں آتی ہے تو ہو ہی نہیں سکتا کہ جیت جائے تاہم جب وہ اپنی اس کوشش میں کامیاب نہیں ہوسکے تو اب دیگر مزاحمتی تنظیموں کو دھمکیاں دینا شروع کردی ہیں، ادھر حماس کا کہنا ہے کہ وہ انتخابات کو صیہونی کے خلاف سیاسی میدان جنگ بنا دیں گے جس کو لے کر صیہونیوں میں سخت خوف وہراس پایا جاتا ہے اور اب وہ انتخابات کو روکنے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں تاہم ان کی یہ کوشش بھی ناکام ہوتی نظر آرہی ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین