مغربی حکومتوں نے یوکرین کو جوہری ہتھیار فراہم کیے تو یورپ صفحۂ ہستی سے غائب ہو جائے گا:روس

روس کے پارلیمنٹ اسپیکر نے خبردار کیا ہے کہ اگر مغربی حکومتوں نے یوکرین کو جوہری ہتھیار فراہم کیے تو یورپ صفحۂ ہوستی سے غائب ہو جائے گا۔

ولایت پورٹل:نیوز ویک کی رپورٹ کے مطابق، کسی بھی مغربی ملک نے روس کے فوجی حملے کے جواب میں یوکرین کو جوہری ہتھیار فراہم کرنے کی پیشکش نہیں کی ہے اور کیف نے بھی ایسے ہتھیار نہیں مانگے ہیں بلکہ مغربی ممالک ان بھاری روایتی ہتھیاروں کی فراہمی سے گریزاں ہیں جن کی یوکرین تلاش کر رہا ہے۔
تاہم پولینڈ کے سابق وزیر خارجہ رادوسواف سیکورسکی جو اب یورپی پارلیمنٹ کے رکن ہیں، نے یوکرین کے سرکاری ٹیلی ویژن چینل کو بتایا کہ مغرب کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ یوکرین کو اپنی آزادی برقرار رکھنے کے لیے جوہری ہتھیار فراہم کرے۔
انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک کو یہ حق حاصل ہے کیونکہ روس نے 1994 کے بوڈاپیسٹ سکیورٹی ایشورنس ٹریٹی کی خلاف ورزی کی  ہے  جبکہ یوکرین نے سابق سوویت یونین کے خاتمے کے بعد اس ملک میں باقی رہ جانے والے تمام جوہری ہتھیاروں کو تباہ کرنے اور جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے میں شامل ہونے پر اتفاق کیا۔
یاد رہے کہ دسمبر 1994 میں کیف نے روس، امریکہ اور برطانیہ کے ساتھ بڈاپسٹ کی مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے، جس کے تحت دستخط کرنے والوں نے جوہری تخفیف اسلحہ کے عزم کے بدلے یوکرین کی موجودہ خودمختاری، آزادی اور سرحدوں کا احترام کرنے کا عہد کیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین