بحرینی آمریت کی عدالت میں ایک بار پھر بے عدالتی کا مظاہرہ؛ 8 بے گناہ شہریوں کو عمر قید کی سزا

بحرینی خاندانی آمریت آل خلیفہ کی عدالت نے آٹھ بحرینی شہریوں کو دہشت گردی کے بے بنیادالزامات کے تحت عمر قید کی سزا سنائی  ہے۔

ولایت پورٹل:روس ٹوڈے کی رپورٹ کے مطابق  بحرین کی ایک مجرمانہ عدالت نے دہشت گردی کے بے بنیاد الزامات عائد کرتے ہوئے آٹھ بحرینی شہریوں کو عمر قید کی سزا سنائی ہےواضح رہے کہ  اس عدالت میں  بحرین کی دیگر عدالتوں کے طریقہ کار کی طرح یہ دعوی کیا گیا  کہ یہ افراد ایران کے ساتھ رابطے میں ہیں، ان افراد کو گذشتہ سال جنوری میں گرفتار کیا گیا تھا۔
 بحرینی پراسیکیوٹر کے دفتر کا دعویٰ ہے کہ ان افراد نے ملک میں تخریب کاری کے لیے ایک گروپ قائم کیا تھا اور سرکاری اداروں کو کمزور کرنے کے لئے لوگوں میں غیر قانونی حرکتیں اور خوف و ہراس پیدا کرتے تھے،واضح رہے کہ  ایسے معاملات میں ، آل خلیفہ حکومت ہمیشہ یہ دعویٰ کرتی ہے کہ ایران اس عمل کی حمایت کرکے بحرین کو غیر مستحکم کرنے کی کوشش کرتا ہے! بحرین میں اس طرح کے الزامات اور اس طرح کے مقدمات کا انعقاد کا مقصد اظہار رائے کی آزادی کو محدود کرنا اور اپوزیشن کو دبانا ہےجبکہ بحرینی عوام صرف اپنے بنیادی حقوق کے خواہاں ہیں لیکن آل حکومت اپنے خلاف ایک لفظ بھی سننا پسند نہیں کرتی ، جو ابھی اس کے خلاف منھ کھولتا ہے یا تنقید کرتا ہے اس کو فورا سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا جاتا ہے پھر بے بنیاد الزام عائد کرکے کبھی پھانسی تو کبھی عمر قید کی سز سنا دی جاتی ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین