Code : 4122 3 Hit

سعودی عرب میں بدعنوانیاں عروج پر؛متعدد عہدیدار گرفتار

سعودی عرب کے انسداد بدعنوانی ادارے کے ایک عہدیدار نے حالیہ 218 فوجداری مقدمات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ متعدد سعودی عہدیداروں کو بدعنوانی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:سعودی سرکاری نیوز ایجنسی واس کی رپورٹ کے مطابق سعودی اینٹی کرپشن ایجنسی کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ حال ہی میں 218 فوجداری مقدمات کی تحقیقات کی گئی ہیں، انہوں نے بدعنوانی کے متعدد واقعات کا بھی حوالہ دیا ، جن میں سے پہلے مشرقی خطے میں ایک کاروباری اور 10 شہری شامل ہیں ، جن میں ایڈوائزری کونسل کے موجودہ ممبر ، ایک سابق جج ، ایک نوٹری پبلک ، ایک سابق بینک کلرک ، ایک سابقہ ضلعی پولیس چیف اورایک ہوائی اڈے  سابق کسٹم ڈائریکٹر شامل ہیں جنہیں ہراست میں لیا گیا ہے نیز اور اس کیس میں متعدد ریٹائرڈ افسران پر بھی الزام عائد کیا جاتا ہے ، جنھیں جسمانی حالت کی وجہ سے گرفتار نہیں کیا گیا ۔
واضح رہے کہ شرقیہ خطے میں ایک کاروباری شخص پر 20 ملین ریال کی رشوت دینے کے ساتھ ساتھ منی لانڈرنگ میں ملوث ہونے اور فرضی لین دین کرنے کا الزام ہے ،وہ وہ پارلیمنٹ کے ممبر اور متعدد دیگر مدعا علیہان کا ساتھی تھا اور غیر قانونی طور پر سعودی عرب کے اندر اور باہر بینکوں سے سہولیات اور قرض حاصل کرنے میں کامیاب رہا تھا، ان کے مطابق  ایک اور معاملے میں ، سعودی عرب کےایک صوبے کےسابق گورنر پر الزام لگایا گیا ہے کہ انھوں نے اسی صوبے کے سرکاری دفاتر میں سہولیات دینے کے بدلے میں ایک تاجر سے لگژری کار وصول کی تھی۔
سعودی نیوز ایجنسی (واس) نے یہ بھی اطلاع دی ہے کہ وزارت قومی گارڈ نے وزارت سے منسلک گوداموں سے دفتر کے ناجائز استعمال اور دوائیں چوری کرنے کے الزام میں وزارت کے تین ملازمین کو گرفتار کیا ہے۔
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین