Code : 3466 26 Hit

آنے والےامریکی صدور کے لئے ایران کے ساتھ تنازعہ سب سے بڑا خطرہ ہے: کیمبرج یونیورسٹی کے پروفیسر

کیمبرج یونیورسٹی کے پروفیسر جان ڈن کا خیال ہے کہ مستقبل کے امریکی صدور کے لئے سب سے بڑا بڑھتا ہوا خطرہ چین یا ایران کے ساتھ ایک سنگین فوجی تنازعہ ہے۔

ولایت پورٹل:گذشتہ ہفتے وال اسٹریٹ جرنل اور ایسوسی ایٹ پریس سمیت متعدد نیوز ایجنسیوں نے یہ خبر شائع کی تھی کہ امریکہ سعودی عرب سے پیٹریاٹ کے دو میزائل سسٹم اور کچھ جنگی طیارے واپس لا رہا ہے۔
رپورٹ کے مطابق ریاست ہائے متحدہ  نے کچھ مہینے قبل ایرانی خطرات کا مقابلہ کرنے کے لئے سعودی عرب میں اپنی فوجوں کی تعداد میں اضافہ کیا تھا جو اب کم رہا ہے۔
واضح رہے کہ امریکہ سعودی عرب سے ایسے وقت میں فوج اور دیگر جنگی ساز وسامان کم کررہاہے جبکہ اس نے رواں سال میں ایران کی جانب سے عراق میں امریکی فوجی اڈے عین الاسد پر کیے جانے والے میزائل حملے کے بعد اس ملک میں امریکی اور اتحادی افواج کے تحفظ کے لئے دو پیٹریاٹ اینٹی میزائل سسٹم تعینات کیے ہیں۔
کیمبرج یونیورسٹی کے پروفیسر جان ڈن  سے جب پوچھا گیا کہ امریکہ سعودی عرب میں اپنی فوجی سرگرمیاں کیوں کم کررہا ہے؟
 تو اس کے جواب میں انھوں نے کہا کہ  خلیج فارس میں یا کہیں بھی موجودہ امریکی پالیسی کی شفافیت یا استحکام کے بارے میں اظہار رائے کرنا ایک بڑی غلطی ہے کیونکہ موجودہ امریکی انتظامیہ نے ٹرمپ کے ذاتی مفادات کو ملکی مفادات پر فوقیت دی ہے اور اس ترجیح پر تیزی سے زور دیا جارہا ہے۔
ا
نہوں نے مزید کہاکہ کسی بھی معاملے پر ٹرمپ کا نقطہ نظر خالصتا تجارتی ہوتا ہے اور وہ اپنی ذاتی حوصلوں اور جذبات سے بہت متاثر ہوتے ہیں ورنہ تیل کی قیمتوں میں اضافے کی کوشش میں تعاون نہ کرنے پر یقینی طور پروہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے ٹکر لیتے اور انھیں سزا دیتے ۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین