Code : 4013 2 Hit

یمن میں سعودی اتحاد کے ایک اڈے کے قریب کلسٹر بم دھماکے سے4یمنی بچے شہید

سعودی اتحاد کے ایک اڈے کے قریب کلسٹر بم پھٹنے سے چار یمنی بچے شہید اور دو زخمی ہوگئے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یمن میں سعودی جارح اتحاد کے ہاتھوں ممنوعہ کلسٹر بموں کے ذریعہ شہریوں کی ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے ، صوبہ مأرب میں تازہ ترین واقعے میں چار بچے  شہید اور دو زخمی ہوئے ہیں،رپورٹ کے مطابق یہ بچے حریب القرامیش کے علاقے میں واقع الحزم گاؤں میں کھیل رہے تھے جب ان کا پاؤں کلسٹر بم پرپڑا  اور دھماکہ ہوگیا۔
یادرہے کہ اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے کئی دہائیوں سے کلسٹر بم کے استعمال پر پابندی عائد کی ہوئی  ہے، تاہم یمن شہری علاقوں میں بمباری کے دوران سعودی حکومت بار بار اس قسم کے بموں کا استعمال کرتی رہی ہے جس میں تازہ ترین اطلاع کے مطابق  المسیرہ نے 12 جون کو اطلاع دی تھی کہ سعودی اتحادیوں کے جنگی طیاروں نے صنعا کے الصباحہ علاقے میں ایک کھیت کو کلسٹر بموں سے نشانہ بنایا تھا،یادرہے کہ گذشتہ روز  صوبہ صعدہ کے شدا سرحدی علاقے میں ایک گاؤں پر سعودی توپ خانے کی گولہ باری کی وجہ سے ایک چھوٹی بچی جاں بحق اور اس کی ماں اور بہن زخمی ہوگئیں۔
قابل ذکر ہے جارح سعودی اتحاد ایک طرف یمن میں جنگ بندی کے دعوے کرتا  ہے اور دوسری طرف اس غریب عرب ملک کے بچوں تک پر بھی رحم نہیں کرتا اور ان کے خلاف بھی ممنوعہ بموں کا استعمال کرتا ہے  اور اقوام متحدہ سمیت پوری عالمی برادری ٹس سے مس نہیں ہوتی جبکہ اقوام متحدہ کی  بچوں کی تنظیم یونیسف متعدد بار کہہ چکی ہے کہ پوری دنیا میں اگر بچوں کے لیے کوئی بدترین جگہ ہے تو وہ یمن ہے جہاں ان کے لیے اسکول جانا اور پڑھنا تو دور کی بات آئے دن بھوک سے ان کی موت ہورہی ہے اس کے علاوہ سعودی اتحاد نے اس ملک کے بنایدی ڈھانچہ کو تقریبا تباہ کردیا ہے جس کےنتیجہ میں یہاں کا طبی نظام مفلوج ہوکر رہ گیا ہے  


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین