چین کورونا ویکسین کی ہماری تحقیقات کو چوری کرنے کی کوشش کررہاہے؛ایف بی آئی کا الزام

ایف بی آئی کے سربراہ کا دعویٰ ہے کہ چین امریکی کمپنیوں پر سائبر اٹیک کرکے کورونا ویکسین کی تحقیقات کو چوری کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

ولایت پورٹل:ایف بی آئی کے ڈائریکٹر کرسٹوفر رائے نے جمعرات کے روز دعویٰ کیا کہ چینی ہیکر کرونا ویکسین کی تحقیقات کرنے والی امریکی کمپنیوں کو مسلسل نشانہ بنارہے ہیں، کرسٹوفر رائے نے جمعرات کے روز سینیٹ کی داخلی سکیورٹی کمیٹی میں ہونے والی میٹنگ کے دوران چین کو امریکہ کی اطلاعات چوری کرنے کے لیے سب سے بڑا خطرہ قرار دیا۔
یادرہے کہ ایف بی آئی نے اس سے قبل مئی میں بھی  یہ دعوی کیا تھا کہ چین اور ملک کی حکومت سے وابستہ گروہ کوئیڈ 19 وبائی امراض کے بارے میں اہم معلومات چرانے کی کوشش کر رہے ہیں،اس کے ایک مہینے کے بعد  ریاستہائے متحدہ امریکہ نے دو چینی شہریوں پر الزام لگایا کہ وہ کورونا ویکسین بنانے والی کمپنیوں کو ہیک کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،واضح رہے کہ چین پر یہ الزامات ڈونلڈ ٹرمپ کی زیر قیادت امریکی انتظامیہ کی جانب سےاس ملک پر مختلف میدانوں میں دباؤ ڈالنے کی مشترکہ کوششوں کا حصہ ہیں۔
یادرہے کہ کرونا وائرس کے پھیلنے کے بعد  ٹرمپ انتظامیہ نے چین پر رازداری اور وائرس کے بارے میں بروقت معلومات فراہم نہ کرنےکا الزام لگایاتھا،دوسری طرف چین چین بار بار امریکی الزامات کی تردید کرتا رہا ہے اور اس نے تناؤ اور تنازعات میں اضافہ کرنے کے بجائے وائرس کے خاتمے کے لئے تعاون بڑھانے پر زور دیا ہے۔




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین