حکومت بدلنے سے پالیسیاں نہیں بدلیں ؛بائیڈن بھی ٹرمپ کی جنون آمیز راہ پر گامزن

امریکہ کے نئے صدر بھی سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جنون آمیز پالیسیوں کو جاری رکھے ہوئے ہیں۔

ولایت پورٹل:عالمی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق بحیرہ جنوبی چین میں امریکی طیارہ بردار بحری بیڑوں نے مشترکہ مشقیں انجام دی ہیں جب کہ کچھ ہی روز قبل امریکہ کے جنگی بحری جہاز متنازع خطے میں چین کے زیر انتظام جزیروں کے نزدیکی علاقوں میں آ گئے تھے،چینی وزارت خارجہ کی جانب سے امریکہ کے اس اقدام کو خطے کے امن و استحکام کے لیے خطرہ قرار دیا گیا ہے، چینی دفتر خارجہ کے ترجمان وانگ وینبن نے بیجنگ میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کے طیارہ بردار بحری بیڑوں کی بحیرہ جنوبی چین میں نقل و حرکت پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور طاقت کا یہ مظاہرہ خطے میں امن و استحکام کے لیے مددگار ثابت نہیں ہوگا، انہوں نے کہا کہ چین اپنی سالمیت کو برقرار رکھنے اور علاقائی امن و استحکام کے تحفظ کے لیے ہرممکن اقدامات کرے گا۔
واضح رہے کہ کچھ ہی دن قبل چین کی جانب سے پاراسل جزیرے کے قریب امریکی جنگی بیڑے جان مک کین کی نقل و حرکت کی مذمت کی گئی تھی۔ جوبائیڈن کے منصب صدارت سنبھالنے کے بعد چینی حدود کے نزدیک امریکہ کی یہ پہلی بڑی نقل و حرکت تھی۔
سحر

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین