برطانوی محکمہ صحت کا نظام سائبر حملے میں درھم برھم

برطانوی محکمہ صحت پر سائبر حملے کے بعد مریضوں کے ریکارڈ کے اندراج کا الیکٹرانک سسٹم کو غیر فعال ہو گیا۔

ولایت پورٹل:ڈیلی ٹیلی گراف کی ویب سائٹ کے مطابق گزشتہ ہفتے سے اور برطانوی محکمہ صحت پر سائبر حملے کے بعد، اس شعبے کا اسافٹ ویئر سسٹم جو ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ کی خدمات فراہم کرتا ہے اور برطانوی میں مریضوں کے ریکارڈ کومحفوظ کرنے کا الیکٹرانک سسٹم بھی بند ہو گیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق برطانوی محکمہ صحت کے حکام نے خبردار کیا ہے کہ حالیہ سائبر حملے کی وجہ سے محکمہ علاج کے اہلکاروں اور ملازمین کو تین ہفتوں تک مریضوں کی معلومات اور طبی ریکارڈ تک رسائی حاصل نہیں ہو گی، اس مسئلے نے بیماری کی غلط تشخیص اور انگلینڈ میں مہلک طبی اور علاج کی غلطیوں کے ہونے کا خطرہ بڑھا دیا ہے۔
واضح رہے کہ برطانوی ہیلتھ کیئر سسٹم پر ہیکروں کے حملے کی وجہ سے اس ملک کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ کے عملے نے ایک بار پھر قلم اور کاغذ کا استعمال کرتے ہوئے مطلوبہ کیسز کے اندراج اور بیمار مریضوں کی مدد کے لیے ایمرجنسی گاڑیاں بھیجیں، تاہم برطانیہ کے ہیلتھ کیئر سیکٹر کے لیے آن لائن سسٹم فراہم کرنے کی ذمہ دار کمپنی ابھی تک موجودہ صورتحال کے خاتمے کے لیے کوئی تاریخ بتانے سے قاصر ہے۔
واضح رہے کہ انگلینڈ میں ہسپتال کے عملے اور طبی عملے کو کہا گیا ہے کہ وہ آئندہ 3 ہفتوں میں اس صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار رہیں،خیال کیا جاتا ہے کہ برطانیہ کے ہیلتھ کیئر سسٹم پر حالیہ سائبر حملہ مجرموں کے ایک گروپ نے کیا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین