برطانیہ کا بحر الکاہل کے پانیوں میں دو جنگی بیڑوں کی مستقل تعیناتی کا اعلان

برطانوی وزارت دفاع نے بحر الکاہل کے پانیوں میں دو برطانوی جنگی جہاز مستقل طور پر تعینات کرنے کے اپنے ارادے کا اعلان کیا ہے۔

ولایت پورٹل:الجزیرہ چینل کی کے مطابق ملکہ الزبتھنامی ایک برطانوی طیارہ بردار بحری جہاز اور اس کے حفاظتی بحری جہاز ستمبر میں کھلے پانی کے ذریعے جاپان روانہ ہوں گے جہاں امریکہ اور جاپان سے چین کا مقابلہ ہے ، لندن نے اب اعلان کیا ہے کہ وہ مشرقی ایشیائی پانیوں میں مستقل طور پر دو جنگی جہاز تعینات کرے گا ۔
 در حقیقت جنگی کے بیڑے کو تعینات کرنے کا ارادہ لندن اور ٹوکیو کے سکیورٹی تعلقات کو اور گہرا کرنے کےلیے گیا  ہے اور جاپان کے اس دعوے کے ساتھ کہ حالیہ مہینوں میں خطے میں چین کے عزائم خطرے میں پڑرہے ہیں، اپنے جاپانی ہم منصب نوبو کیشی کے ساتھ مشترکہ بیان دیتے ہوئے  برطانوی وزیر دفاع بن ولیس نے کہاکہ جنگی بیڑے کی تعیناتی کے بعد برطانیہ رواں سال کے آخر تک علاقے میں دو گروپ جہاز مستقل طور پر رکھے گا۔
 جاپانی وزیر دفاع نے بن ولیس  کی بات کی تصدیق کرتے ہوئےکہا کہ ہم دونوں فریق خطرات اور جبر کے ذریعہ حیثیت کو تبدیل کرنے کی کوششوں کے مستقل طور پر مخالفت کرنے کے ساتھ ساتھ خود مختاری پر مبنی ایک آزاد انڈو پیسیفک خطے کی اہمیت کی حمایت کرنے میں اپنے مشترکہ مؤقف کی توثیق کرتے ہیں۔
 ٹوکیو میں برطانوی سفارتخانے کے ترجمان کے مطابق برطانوی بحری جہازوں کے پاس مستقل اڈہ نہیں ہوگا،یادرہے کہ  واشنگٹن کے ایک قریبی اتحادی کی حیثیت سے  جاپان بیرون ملک امریکی فوج کی موجودگی کی میزبانی کرتا ہے  جس میں بحری جہاز ، ہوائی جہاز اور فوج کی تعیناتی بھی شامل ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین