بن سلمان نے ایک سال سے اپنی چچازاد بہن کو جیل میں ڈال رکھا ہے

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے حکم پر سعودی شاہی خاندان کی گرفتاریوں میں صرف مرد ہی شامل نہیں بلکہ ایک سال سے اپنی چچازاد بہن کو بھی الحائر جیل میں قید کر رکھا ہے ۔

ولایت پورٹل:انٹر ریجنل اخبار القدس العربی نے ہسپانوی اخبار اے بی سی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فروری2019 میں  بن سلمان نے چچا زاد بہنبسمہ بنت سعود بن عبد العزیز"اس وقت گرفتار کرلیا جب وہ سوئٹزرلینڈ کے طبی سفر کا منصوبہ بنا  رہی تھیں۔
رپورٹ کے مطابق ، محمد بن سلمان کے حکم پر باسمہ ایک سال سے زیادہ عرصہ سے الحائر جیل میں قید ہیں۔
مذکورہ اخبار نے مزید لکھا ہے کہ کہانی 28فروری 2019 کو اس وقت شروع ہوئی جب بسمہ نےعلاج کی غرض سے  سوئٹزرلینڈ جانے کے لئے ریڈ اسٹار ایئر لائنز کے ساتھ 80000 ڈالر کا  معاہدہ کیا نیز انھوں نے  اپنے پورے کنبے کی اس سفر پر جانے کے لیے اجازت لے رکھی تھی لیکن ان کا جہاز اڑان نہیں بھر سکا اور انھیں گرفتار کر لیا گیا۔
بسمہ کو اس دن کے بعد ہفتہ میں ایک بار اپنے گھر والوں کے ساتھ ٹیلی فون پر بات کرنے کی اجازت دی جاتی ہے اور ان کے گھر میں کسی نہیں  معلوم کہ بسمہ کو کب تک زیر حراست میں رکھا جائے گا جبکہ ان کی صحت کی خراب ہے۔
رپورٹ میں مزید لکھا گیا ہے کہ  بسمہ بن سعود نے یورپ میں بہت سارے مضامین لکھے ہیں جن میں  سعودی عرب میں خواتین کی حالت اور سیاسی اصلاحات کا ذکر کیا ہے ،وہ اپنے انہیں مضامین کی وجہ سے کافی معروف بھی ہیں۔
بسمہ2016 میں اس وقت کے ولی عہد محمد بن نائف کی وساطت سے سعودی عرب میں آئی تھیں اور انھوں نے واپس آکر سعودی بادشاہ شاہ سلمان سے طائف میں واقع اپنے والد کی زمین اور ایک ارب ڈالر کے سوئس بینک اکاؤنٹ کا مطالبہ کیا ۔



1
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین