Code : 3399 26 Hit

بن سلمان کا خونی خواب

امریکی میگزین نے نیوم شہر کی تعمیر کے لئے بن سلمان کے بلند پرواز منصوبے کے نفاذ کو سعودی حکام کا اپنے شہریوں پر ظلم اور جارحیت کا ایک اور مظہر قرار دیا ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی امریکی میگزین فارن پالیسی نےاپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے  محمد بن سلمان کے خوابوں کا شہر بنانے پر اعتراض کرنے والے سعودی شہری کے قتل نےایک بار پھر سعودی حکام کے اپنے شہریوں کے ساتھ رویے کو عیاں کردیا ہے۔
مذکورہ میگزین  کی رپورٹ کے مطابقخارجہ پالیسی کے مطابق ، سعودی سکیورٹ فورسزز کے خصوصی دستوں کے ہاتھوں 13 اپریل کو عبدالرحیم الحویطی کو ہلاک کیے جانے کے کچھ ہی دن بعدریاض حکومت نے ایک بیان جاری کیا جس میں ان پر "مطلوب" کا لیبل لگایا گیا تھا۔
سعودی عہدیداروں اور ان کے کارندوں سوشل میڈیا پر  بھی عبد الرحیم کودہشت گرد قرار دیاجبکہ اپنی موت سے چند گھنٹے قبل مذکورہ سعودی شہری نے یوٹیوب پر ایک ویڈیو پوسٹ کی جس میں اس بربریت کی پیش گوئی کی تھی، انھوں نے سعودی حکام کے اس اقدام کو انہوں نے اس اقدام کو شہر نیوم کی تعمیر کے لئے الحویطات قبیلے کے جبری طور پر منتقل کیے جانے کی مخالفت کرنے کی سزا قرار دیا۔
واضح رہے کہ الحویطات قبیلہ سیکڑوں سالوں سے سعودی عرب کے شمال مغربی صوبہ تبوک کے دیہاتوں اور قصبوں میں مقیم ہےاور اب بن سلمان کے خوابوں والے شہر کے لئے تقریبا 20000 افراد کو گھر چھوڑنا پڑے گا۔
یاد رہے کہ 2017 میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے سیاحوں ، ٹیک انٹرپرینیوروں اور دولت مند سرمایہ کاروں کے لئے 500 بلین ڈالر کا ایک جدید شہر بنانے کے اپنے منصوبے کا اعلان کیا جو بیلجیم کے برابر ہوگا جس میں دنیا کی پیشرفتہ ترین ٹیکنالوجی کے ساتھ ساتھ انسانوں سے زیادہ ربوٹ کام کریں گے نیز اس شہر کے قوانین بھی سعودی عرب سے کچھ الگ ہوں گے۔
  ۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम