Code : 3165 80 Hit

سلمان کے سوا کوئی بن سلمان کا حامی نہیں:سعودی یونیوسٹی پروفیسر

سعودی یونیورسٹی کی ایک پروفیسر نے سعودی شہزادوں کی گرفتاریوں پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بن سلمان ابھی بھی بادشاہت تک نہ پہنچنے سے خوفزدہ ہیں۔

ولایت پورٹل:سعودی یونیورسٹی کی ممتاز پروفیسر اور حزب اختلاف کی رکن مضاوی الرشید نے میڈل ایسٹ آئی ویب سائٹ میں شائع ہونے والے اپنے مضمون میں سعودی فرمانروا شاہ سلمان کے بھائی  اور سابق سعودی ولی عہد کی گرفتاری کو بن سلمان کی طاقت کی کمزوری کی علامت قرار دیتے ہوئے لکھا ہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان ابھی تک حکومت کے تمام حصوں میں اپنی طاقت کا زور نہیں دکھا سکے ہیں یہی وجہ ہے کہ وہ ڈھٹائی  سے فتاریوں میں مصروف ہیں۔
الرشید نے لکھا ہے کہ  1960 کی دہائی میں شاہ فیصل کی بغاوت اور بن سلمان کی بغاوت کے درمیان فرق کا ان کے ہاتھوں اپنے چچا  اور چچا زادوں کی گرفتاریوں سے خوب اندازہ ہوجاتا ہے کہ  شاہ فیصل کو زیادہ تر شاہی خاندان کی حمایت حاصل تھی لیکن بن سلمان کا ان کے  والد کے علاوہ کوئی اور حمایتی نہیں ہے  خاص طور پر سعودی خاندان کے وہ افراد جو بادشاہ بننے کے لیے لائن میں  تھے اور اب ہویا تو حراست میں ہیں یا برخاستگی کیے جاچکے ہیں ، ان کی نظر میں بن سلمان مکمل طور پر مسترد ہیں اور وہ ان سے نفرت کرتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ سعودی ولی عہد حیرت زدہ ہیں اور وہ اپنے مطلوبہ انقلاب(دوسرے انقلابوں کے برعکس جو حکومت  کے سربراہ کی طرف سےشروع ہوتا ہے)  کو عالمی سطح پر  شدید دباؤ اور بحران کا شکار دیکھ رہے ہیں جس کی وجہ سے سعودی تیل اور اسٹاک مارکیٹس زوال کا شکار ہیں۔
مضاوی الرشید کے مطابق  محمد بن نائف  جو پچھلے زیر حراست ہیں اور انھیں دو سالوں میں کوئی عہدہ نہیں دیا گیا ہے ، اس سے پتہ چلتا ہے کہ بن سلمان اب بھی انہیں اپنے لئے ایک سنگین خطرہ سمجھتے ہیں۔

1
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین