Code : 4071 10 Hit

بیروت سانحہ کے قصورواروں کو ہرگز معاف نہیں کیا جائےگا:لبنانی وزیر اعظم

لبنانی وزیر اعظم نے بیروت میں خوفناک دھماکے کے بعد اپنی تقریر میں زور دے کر کہا کہ ہم اس سانحے کے مرتکب افراد کو سزا دیئے بغیر نہیں رہیں گے۔

ولایت پورٹل:لبنانی وزیر اعظم حسن دیاب نےکل شام بیروت میں ہونے والے خوفناک دھماکے کے بعد ایک تقریر میں کہا کہ ہم اس سانحے کے مرتکب افراد کو سزا دیئے بغیر نہیں رہیں  گے، انہوں نے اس حقیقت کا ذکر کرتے ہوئے کہ لبنان کو تباہ کن صورتحال کا سامنا کرنا پڑا ہے ، کہا کہ بیروت بندرگاہ کے گودام میں جو مواد پھٹا ہےوہ 2014 سے موجود تھا ، لبنانی وزیر اعظم نے تمام دوست ممالک سے لبنان کے شانہ بشانہ کھڑے ہونے اور اس کی مدد کرنے کی اپیل اور اپنے شہریوں سے اس سانحے میں متحد رہنے کا مطالبہ کیا۔
انہوں نے زور دیا کہ وہ تحقیقات مکمل ہونے تک قیاس آرائی نہیں کریں گے ، لیکن انہوں نے کہا کہ سانحہ کے ذمہ داروں کو سزا دی جائے گی اور انھیں اس کی قیمت چکانا ہوگی،واضح رہے کہ بیروت میں ہونے والےخوفناک دھماکے میں اب تک 30 سے زائد افراد کے ہلاک اور 3000 کے قریب زخمی ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے، بیروت کی بندرگاہ میں یہ دھماکا بھاری مقدار میں آتشین مواد کے پھٹنے سے ہوا  اور عینی شاہدین کے مطابق پہلے ایک چھوٹا  دھماکہ ہوا تھا اور پھر شدید دھماکہ ہوا۔
فرانسسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق  بیروت کی بندرگاہ میں ہونے والا دھماکا اتنا تباہ کن تھا کہ جزیرے قبرص کے رہائشیوں نے بھی اس کی آواز سنی، اردن زلزلہ آبزرویٹری نے کہا کہ بیروت میں دھماکا 4.5 اعشاریہ 8 شدت کے زلزلے کے مترادف ہے، یروت کے گورنر مروان عبود نے کہا ہے کہ نقصانات کا دائرہ بہت زیادہ وسیع ہے،تاہم لبنانی اعلی عہدہ داروں کا کہنا ہے کہ اس سانحہ کا تعلق دہشتگردی سے نہیں ہے۔
  ۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین