Code : 4072 10 Hit

عراق میں امریکی فوجی قافلے پر حملہ

منگل کی شام جنوبی عراق میں امریکی فوجی رسد کے قافلے پر حملہ کیا گیا۔

ولایت پورٹل:جنوبی عراق میں مزاحمتی گروپوں نے امریکی فوجی رسد کے قافلے کو نشانہ بنایا، مبینہ طور پر امریکی سامان لے جانے والے قافلے پر سڑک کنارے نصب بموں سے حملہ کیا گیا، امریکی سامان کی وجہ سے لگی آگ بجھانے کے لئے صوبۂ ذی‌قار پولیس اور فائر اینڈ ریسکیو گاڑیاں جائے وقوع پر روانہ کردی گئیں۔
یادرہے کہ تقریبا تین ہفتہ قبل  دیوانیہ شاہراہ پر ایک حملے میں کئی امریکی بکتر بند گاڑیاں اور عملہ کیریئر سوار قافلے کو نشانہ بنایا گیا تھا جس کے نتیجہ میں عراق میں قابض امریکی فوج کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا۔
واضح رہے کہ امریکہ نے داعش کے خلاف نام نہاد اتحاد کی شکل میں عراق اور شام  کے متعدد علاقوں پر قبضہ کر رکھا ہے جہاں  وہ داعش کے خلاف کم اور عراقی عوا م کے خلاف زیادہ کاروائیاں کرتے ہیں بلکہ اس کے برخلاف داعشی دہشتگرد جہاں مشکل میں پھنس جاتے ہیں تو امریکی دہشتگرد رضاکارانہ طور پر ان کی حمایت میں میدان میں آجاتے ہیں اور اس طرح داعش مخالف اتحاد کی آڑ میں در اصل اس بدنام زمانہ اور دہشت گرد تنظیم کی حمایت اور پشت پناہی کرتے ہیں۔
عراق میں امریکہ کو سب سے زیادہ مشکل عراقی عوامی تنظیم الحشد الشعبی سے ہے اور یہ تنظیم امریکی دہشت گردوں کی آنکھ کا کانٹا ہے اس لیے کہ ایک تو الحشد الشعبی نے عراق کو دہشتگردوں کے ناپاک وجود سے پاک کرنے کی ٹھان رکھی ہے اور دوسرے یہ تنظیم اپنے ملک میں امریکہ سمیت تمام غیر ملکی افواج کے انخلا کا مطالبہ کرتی ہے جس سے امریکہ ہر وقت الحشد کو نشانہ بنانے کے درپے رہتا ہے لیکن یہ استقامتی تحریک دن بدن مضبوط سے مضبوط تر ہوتی چلی جاتی ہے اور عوام کے درمیان بھی اس کی مقبولیت میں روز بروز اضافہ ہوتا چلا جا رہاہے اس لیے کہ ان کی پشت پناہی میں جنرل قاسم سلیمانی اور ابو مہدی المہندس جیسے سورماؤں کا خون ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین