Code : 2479 63 Hit

نجف اشرف میں ایرانی قونصل خانہ پر حملہ ؛ایران عراق تعلقات کو خراب کرنے کی کوشش

عراقی حکام کا کہنا ہے کہ نجف اشرف میں ایرانی قونصل خانہ پر حملے کا مقصد ایران اور عراق کے تعلقات کو خراب کرنا ہے۔

ولایت پورٹل:عراقی وزارت خارجہ نے کل رات اس ملک کے مقدس شہر نجف اشرف میں ایرانی قونصل خانہ پر ہونے والے حملے کو ایران عراق تعلقات خراب کرنے کی کوشش قرار دیتے ہوئے مظاہرین سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مظاہروں کو بدنام کرنے والے شر پسند عناصر سے اپنے آپ کو الگ  رکھیں،عراقی وزارت خارجہ نے قونصل خانہ پر ہونے والے حملہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس کو ملک میں ہونے والے مظاہروں کے مقصد کے برخلاف قرار دیا ہے،وزاتخانہ نے مزید کہا ہے کہ مظاہرے کرنا عوام کا مسلم حق ہے،عراق کے مقامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ بدھ کی رات کو کچھ نقاب پوش شر پسند عناصرنے نجف اشرف میں قائم ایرانی قونصل خانہ پر حملہ کیا  اور عمارت کے ایک حصہ کو آگ لگا دی جس کو سعودی عرب کے نیوز چینل العربیہ نے براہ راست نشر کیا جبکہ العربیہ چینل پر عراق میں پابندی عائد ہے،مقامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں میں ایک بھی شخص نجف کا باشندہ نہیں تھا بلکہ سب باہر سے آئے تھے اور نقاب پہنے ہوئے تھے،نجف اشرف سے موصولہ رپورٹ کے مطابق  مذکورہ حملہ میں 47 عراقی حفاظتی اہلکار زخمی ہوئے ہیں  جبکہ عمارت کوہونے والے نقصان کی تفصیلات ابھی منظر عام پر نہیں آئی ہیں تاہم ایرانی سفارتی عملہ حملہ کے وقت عمارت میں موجود نہیں تھا،عراقی ذرائع ابلاغ کا مزید کہنا ہے کہ یہ حملہ ایک سوچی سمجھی سازش اور مکمل منصوبہ کے تحت کیا گیا ہے کہ جس میں نقاب پوش شر پسند عناصر کو شہر کے باہر سے کرائے پر لایا گیا تھا۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین