Code : 3072 17 Hit

ٹرمپ کے ہندوستان دورے اور شہریت کے منتازعہ ترمیمی بل کے خلاف مظاہرں میں 20 افراد ہلاک

امریکی صدر کے ہندوستان کے دورے پر ہندوستانی عوام کے مختلف طبقوں کی طرف سے احتجاج جاری ہے جہاں پولیس اور سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی نے ہندوستانی طبی ذرائع ابلاغ کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ  ہندوستان اور اس ملک  میں منتازعہ ترمیمی بل کے خلاف مظاہرے کرنے والے افراد کے خلاف پویس اور سکیورٹی فورسز نے وحشانہ طور پر طاقت کا استعمال کیا ہے جس کے نتیجہ میں اب تک  میں 20 افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ  200 سے زائد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔
دہلی کے گرو ٹیگ بہادر اسپتال کے سربراہ کا کہنا ہے کہ زخمی ہونے والے افراد میں سے 15 کی حالت خراب کافی خراب ہے جس  وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہونے کے امکانات پائے جاتے ہیں ۔
روئٹرز نے اس سلسلہ میں مزید لکھا ہے کہ پولیس اور سکیورٹی فورسز ٹرمپ کے سفر اور شہریت کے بل کے  خلاف مظاہرہ کرنے والے افراد  کو منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس اور دھواں دار دستی بموں کا استعمال کیا ہے جس کی وجہ سے لوگ زیادہ تعداد میں زخمی ہوئے ہیں۔
سوشل میڈیا پر موجود صارفین نے بھی اطلاع دی ہے کہ کچھ  شر پسند عناصرنے مسلمانوں پر حملہ کیا ہے اور ان کے کاروبار کو لوٹا ہےنیز ان کے مقدس مقامات کی بھی توہین کی ہے۔
یادرہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے منگل کو ہندوستان چھوڑنے سے قبل کہا تھا کہ انھوں نے ہندوستانی  وزیر اعظم کے ساتھ تشدد پر تبادلہ خیال کیا ہے۔
ٹرمپ نے اس ملک  کی مسلمان آبادی پر بڑھتے ہوئے حملوں کے سلسلہ میں بھی  وزیر اعظم ہند سے مشاورت کرنے کا دعویٰ  کیا۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین