صیہونیوں کے ہاتھوں ایک اور فلسطینی قیدی شہید

فلسطینی ذرائع نے صہیونی جیل میں قید ایک فلسطینی قیدی کی طبی غفلت کے نتیجے میں شہادت کی خبر دی ہے۔

ولایت پورٹل:فلسطینی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق صہیونی جیل میں قید فلسطینی قیدی صالح عابد العمورصہیونی طبی غفلت کے نتیجے میں جمعرات کی صبح شہید ہو گئے۔
العربی الجدید کے مطابق الاسیر کلب نے ایک بیان میں اعلان کیا کہ صالح عابد العمور نامی اسیر کو آج صبح اسرائیل کے سوروکا اسپتال میں شہید کردیا گیا،کلب نے بتایا کہ شہید العمور کو 2008 سے حراست میں لیا گیا تھا اور انھیں 19 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔
واضح رہے کہ العمور کو حال ہی میں ان کی بگڑتی ہوئی جسمانی حالت کے نتیجے میں جیل سے عسقلان اسپتال اور وہاں سے سوروکا اسپتال منتقل کیا گیا تھاجہاں ان کی بڑی سرجری کی گئی تھی،یادرہے کہ العمور کی شہادت سے قبل الاسیر کلب نے اسرائیلی جیل انتظامیہ کو قیدی کی موت کا ذمہ دار ٹھہرایا تھا اور ان کی رہائی کے لیے بین الاقوامی قانونی اداروں سے فوری مداخلت کا مطالبہ کیا تھا۔
واضح رہے کہ فلسطینی قیدی کی شہادت کی خبر کے بعد حماس نے زور دے کر کہا کہ اسرائیلی جیلوں میں صالح العمور کی شہادت دانستہ طبی غفلت، انسانیت کے خلاف جرائم، انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور تمام بین الاقوامی اقدار اور قوانین کی خلاف ورزی کا نتیجہ ہے۔
حماس کے ترجمان حازم قاسم نے ایک پریس ریلیز میں کہاکہ اسرائیلی جیلوں میں قید شہداء کی تعداد میں 227 کا اضافہ قابض حکومت کی طرف سے فلسطینی قیدیوں کے حقوق کی وسیع پیمانے پر خلاف ورزی کی نشاندہی کرتا ہے،قاسم نے مزید کہاکہ ہمارے ہیرو اسیروں کے خلاف یہ جرائم ان کی طاقت کو ختم نہیں کرتے اور ہم ان کی آزادی کے لیے اپنا جہاد جاری رکھیں گے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین