آزادی کے نام پر سرزمین وحی کو عیاشی کا اڈہ بنانے کی کوشش

سعودی عرب میں جازان ونٹر  کے نام سے ایک پروگرام ہوا ہے جس میں نیم برہنہ خواتین سے ڈانس کیا ہے جسے لے کر سوشل میڈیا پر کافی ہنگامہ آرائی دیکھنے کو مل رہی ہے۔

ولایت پورٹل:رائے الیوم انڑ ریجنل اخبار نے سی این این کے حوالے سے رپورٹ دی ہے کہ سعودی عرب میں جازان وینٹر کے نام سے ہونے والے پروگرام کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے جس میں نیم برہنہ خواتین ڈانس اور رقص کرتی نظر آ رہی ہیں، تاہم علاقے کے امیر نے اس مسئلے کی تحقیقات کے احکامات جاری کئے ہیں، ڈانس اور رقص کرنے والی خواتین میں ایک خاتون کے لباس پر زیادہ اعتراض کیا جا رہا ہے، علاقے کے امیر کے آفیشل ٹوئٹر اکاونٹ پر وہ حکم پوسٹ کیا گیا ہے جس میں مسئلے کی تحقیقات کے لئے کہا گیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں لوگوں کو اس بات پر ناراضگی ہے کہ یہ ملک عالم اسلام میں ایک خاص مقام رکھتا ہے کیونکہ یہاں  مکہ  مکرمہ اور مدینہ منورہ جسے اہم مقدس مقامات ہیں،سعودی ولیعہد محمد بن سلمان کے بارے میں ملک کے اندر اور باہر عام نظریہ ہے کہ وہ اس ملک کو پوری طرح بدلنا چاہتے ہیں لیکن تجزیہ نگاروں کو اعتراض ہے کہ آزادی دینے کے نام پر بن سلمان سعودی عرب کو عیاشی کا اڈہ بناتے جا رہے ہیں جبکہ انھوں نے اس ملک کی مذہبی پولیس کے اختیارات کو بھی کم کر دیا ہے جو اس ملک کے مذہبی حلقوں میں تشویش کا باعث بنا ہوا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین