امریکی کورونا سے مر رہے ہیں اورٹرمپ گولف کھیل رہے ہیں؛معروف برطانوی صحافی

واشنگٹن ڈی سی میں مقیم ایک مشہور برطانوی صحافی مہدی حسن نے امریکہ میں کورونا کے تازہ ترین اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا اس ملک میں ایک دن میں 1100 افراد کی کورونا کے باعث موت ہوگئی اور یہاں کے صدر ٹرمپ گولف کھیل رہے ہیں۔

ولایت پورٹل:امریکی دارالحکومت میں مقیم ایک معروف صحافی نے ریاستہائے متحدہ میں کرونا وائرس کے وبا کی حالت کے بارے میں انتباہ دیتے ہوئے اس وائرس پر قابو پانے میں ڈونلڈ ٹرمپ کے اقدامات اور گولف کھیلنے پر ان کے اصرار کو تنقید کا نشانہ بنایا،امریکی ویب سائٹ انٹراسیپٹ کے کالم نویس اور الجزیرہ کے معروف میزبان مہدی حسن نے امریکہ میں کورونا وائرس سے اموات کے بارے میں تازہ ترین اعدادوشمار پر اپنی رائے ٹویٹ کی اوراس سلسلہ میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ناقص کارکردگی کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔
واشنگٹن ڈی سی میں مقیم اس مشہور برطانوی صحافی نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ریاستہائے متحدہ میں صرف  ایک دن میں 1100 افرادکورونا کی وجہ سے  ہلاک ہوئےجو ایک  ہی دن میں امریکہ میں چار طیارے گرنے اور اس کے تمام سواروں کو ہلاک کرنے کے برابر ہے،مہدی حسن نے مزید کہاکہ بہت سے لوگوں کو یہ احساس تک نہیں ہے کہ صورتحال کتنی خراب ہے جبکہ اس امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اس ہفتے کے آخر میں ہفتہ اور اتوارکوایک بار پھر گولف کھیل رہے ہیں۔
یادرہے کہ مذکورہ معروف مغربی صحافی نے ایسے وقت میں ریاستہائے متحدہ میں کورونا وائرس کی صورتحال اور اس سلسلہ میں امریکی صدر کی کارکردگی کو تنقید کا نشانہ بنایا ہےجب کہ چار دن کے اندر اس ملک میں کورونا کی وجہ سے ایک ہزار سے زیادہ اموات ریکارڈ کی گئیں،جان ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق جمعہ کے روز ریاستہائے متحدہ امریکہ میں کورونا کے باعث کم سے کم 1019 افراد کی موت ہوئی  جس کے بعد اس ملک میں اس وباسے ہلاک ہونے والے افراد کی  مجموعی تعداد 40 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین