امریکہ کو اندر سے تباہ کیا جا رہا ہے: ٹرمپ

سابق امریکی صدر نے کہا کہ واشنگٹن کو اندر سے تباہ کیا جا رہا ہے اور وہ دنیا کے طنز کا موضوع بن گیا ہے۔

ولایت پورٹل:نیوز ویک کی رپورٹ کے مطابق سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اتوار کو ایک بیان میں افغانستان سے نکلنے اور دہشت گردی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ  امریکہ اب دنیا میں طنز و تمسخر کا موضوع بن چکا ہے۔
 ٹرمپ نے اپنے بیان میں کہا کہ ہمارا ملک اندر سے ٹوٹ رہا ہےجبکہ کوئی بھی اسے روکنے کے لیے کچھ نہیں کر رہا ہے،انہوں نے کہا کہ غیر قانونی طور پر ہماری سرحدوں میں داخل ہونے والے لاکھوں لوگوں نے ہمارے ملک کو زہر آلود کردیا ہے۔
 انہوں نے ٹرمپ کےترجمان لِز ہیرنگٹن کے ذریعہ ٹویٹر پر پوسٹ کیے گئے بیان میں کہا کہ زیادہ تر معاملات میں امریکہ میں داخل ہونے والوں سے پوچھ گچھ یا داخلے سے بھی نہیں روکا جاتا، یہ لوگ خطرناک ہیں اور زیادہ تر مجرم  اوردوسرے ممالک کے مفرور قیدی ہیں،ان کو داخلے سے روکنے کے لیے سب سے پہلے جو کام کرنے کی ضرورت ہے وہ یہ ہے کہ اس سرحدی دیوار کو مکمل کیا جائے۔
 ٹرمپ نے مزید کہا کہ میکسیکو کے ساتھ ایک معاہدہ ہونا چاہیے جس میں یہ ملک ایک 'رکاوٹ' کے طور پر کام کرے ہ نہ کہ غیر قانونی طور پر داخل ہونے والے تارکین وطن کے لیے 'لانچنگ پیڈ' بنے۔
 تارکین وطن کے بارے میں بات کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ بہت سے افغان جو طالبان کے اقتدار سنبھالنے کے بعد ملک چھوڑ کر بھاگ آئے ہیں انہیں امریکہ میں آباد نہیں ہونا چاہیے، انہوں نے مزید کہاکہ افغانستان سے طیاروں میں سوار ہوکر آنے والوں میں سے 97 فیصد کو یہاں نہیں رہنا چاہیے۔
ٹرمپ نے مزید کہا کہ افغانستان سے آنے والے ان لوگوں کی احتیاط سے تفتیش کرنے کی ضرورت ہ ، کیونکہ ان میں سے بہت سے دہشت گرد گروہوں سے انتہائی  درجہ تک وابستہ ہو سکتے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین