چوبیس گھنٹے میں آل سعود کی 267 مرتبہ الحدیدہ جنگ بندی کی خلاف ورزی

یمنی ذرائع نے اس ملک کے صوبہ الحدیدہ میں سعودی جارح اتحاد کی جانب سےپچھلے چوبیس گھنٹوں کے دران الحدیدہ جنگ بندی کی267 خلاف ورزیوں کی اطلاع دی ہے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ چینل کی رپورٹ کے مطابق یمنی ذرائع نے جارح سعودی اتحاد کی جانب سے یمنی صوبے الحدیدہ میں وسیع پیمانہ پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کی اطلاع دی ہے، رپورٹ کے مطابق رابطہ افسروں کے مرکز کے ایک ذریعے نے بتایا کہ سعودی اتحاد نے یمن کے الحدیدہ صوبے میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 267 مرتبہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی۔
 انہوں نے جنگ بندی کی ان خلاف ورزیوں کی مثال کے طور پر جنگی قلعوں کی تخلیق اور پانچ لڑاکا طیاروں اور جاسوس طیاروں کی پرواز کا حوالہ دیاجبکہ یمنی صوبے الحدیدہ میں جارح سعودی اتحاد کی جانب سے راکٹ اور توپ خانے سے بمباری  نیز مختلف ہتھیاروں سے فائرنگ کے 134 واقعات جنگ بندی کی دیگر خلاف ورزیاں ہیں۔
 دریں اثنا سعودی لڑاکا طیاروں نے یمن کے دیگر صوبوں پر حملے جاری رکھے ہوئے ہیں اور صوبہ مأرب کے علاقے صرواح اور الجوبہ پر 34 فضائی حملے کیے ہیں، سعودی لڑاکا طیاروں نے صوبہ تعز کے علاقے موقبنہ پر بھی تین بار بمباری کی۔
قابل ذکر ہے کہ اسٹاک ہوم معاہدے کے دائرہ کار میں الحدیدہ جنگ بندی کے قیام کے بعد سے سعودی عرب نے اس جنگ بندی کی کبھی پابندی نہیں کی ہے،تاہم ریاض کی جانب سے الحدیدہ جنگ بندی کی عدم تعمیل کےخلاف بڑے پیمانے پر یمنی مظاہروں کے باوجود اقوام متحدہ  سمیت پوری عالمی برادر ی نے اب تک سعودی جارحیت کو روکنے کے لیے کوئی اقدام نہیں کیا ہے، اگر کبھی کیا بھی تو یمنیوں کو اپنا دفاع کرنے کے جرم میں آڑے ہاتھوں لیا ہے یہی وجہ ہے کہ یمنی عوام پوری عالمی برادری کو اپنے اوپر ہونے والے مظالم میں شریک سمجھتے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین