Code : 4118 6 Hit

یمنی شہریوں کے خلاف آل سعود کی تازہ ترین جارحیت؛1شہید،11زخمی

یمن کےصوبہ الحدیدہ کے ایک علاقے پر سعودی اتحاد کے توپ خانے کے حملے میں ایک شہری شہید اور چھ بچوں سمیت 11 افراد زخمی ہوگئے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ چینل کی رپورٹ کے مطابق صوبہ الحدیدہ میں مغربی یمن کے شہر بیت الفقیہ میں شہریوں کے گھروں پر سعودی-امریکی اتحاد کے کرائے کے فوجیوں نے توپ خانے سے حملہ کیا جس کے نتیجہ میں ایک یمنی شہری شہید اور 11 زخمی ہوگئے،رپورٹ کے مطابق اس توپ خانے کےحملے میں زخمی ہونے والے 11 افرادمیں سے 6 بچے ہیں۔
یادرہے کہ جارح سعودی اتحاد ایک طرف یہ دعوی کر رہا ہے کہ اس نے کورونا وائرس کی عالمی وبا کے پیش نظر یمن پر اپنے حملے بند کر دیے ہیں اور دوسری طرف آئے دن اس غریب عرب ملک کے نہتے عوام کو نشانہ بنا رہا ہے ،یاد رہے کہ سعودی جارحیت کا شکار ہونے والے زیادہ تر مظلوم بچے اور خواتین ہوتی ہیں جبکہ اقوام متحدہ سمیت پوری عالمی برادری یا تو مکمل طور پر خاموشی اختیار کیے ہوئے ہے اور اگر کبھی یہ بولتے بھی ہیں تو جارحین کے حق میں بولتے ہیں نہ کہ مظلوم یمنی عوام کے حق جیسا کہ حال ہی میں اقوام متحدہ نے یمنی بچوں کے خون سے ہولی کھیلنے والے سعودی عرب کا نام بچوں کے حقوق پامال کرنے والے ممالک کی فہرست سے خارج کرکے ثابت کر دیا ہے ہماری ڈکشنری میں انصاف، مظلوم اور بے بسی نام کی کوئی چیز نہیں ہے ہمیں تو صرف ڈالروں سے مطلب ہے جو دے گا اسی کے حق میں بولیں گے۔
یہی وجہ  ہے کہ سعودی عرب نہتے یمنیوں کا اس قدر وحشیانہ طریقہ سے قتل عام کر رہا ہے اس لیے کہ ا س کو معلوم ہے کہ عالمی برادری کے منھ میں ڈالر ہیں وہ بولیں گے کہاں سے اسی لیے تو یمنی عوام اپنے اوپر ہونے والے مظالم میں عالمی برادری کو بھی سعودی عرب کے برابر شریک سمجھتے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین