Code : 4091 9 Hit

آل سعود کے ہاتھوں12عام یمنی شہری شہید

یمن کے نہتے عوام پر سعودی عرب کے جارحانہ حملوں کی نئی لہر میں اکیس یمنی شہری شہید اور زخمی ہوگئے۔

ولایت پورٹل:المسیرہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق یمنی عوام کے خلاف سعودی حکومت کے جارحانہ حملوں میں اس ملک کے رہائشی علاقوں پر بمباری کی گئی ہے۔
 یمن کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ جارح سعودی اتحاد کے نئے حملوں میں صوبہ الجوف کے المعاطرہ علاقے کے نو افراد شہید اور بارہ بچے اور خواتین زخمی ہوگئے ۔ مرنے والوں میں زیادہ تربچے ہیں ۔
یادرہےجولائی کے مہینے میں جارح سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے صوبہ الجوف کے شہر الحزم میں شادی کی ایک تقریب پر بمباری کی تھی جس کے نتیجے میں پینتیس افراد جاں بحق ہوگئے تھے ۔
واضح رہے سعودی عرب نے امریکہ ،متحدہ عرب امارات اور چند دیگر عرب ممالک کی حمایت سے مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ حملے کر رہا ہے  نیز سعودی عرب نے غریب عرب ملک یمن کا فضائی ، زمینی اور سمندری محاصرہ بھی کر رکھا ہے  
یادرہے کہ یمن پر سعودی جارحیت کے نتیجے میں اب تک سولہ ہزار سے زیادہ یمنی شہید ، دسیوں ہزاروں زخمی اور لاکھوں دربدر ہوچکے ہیں۔
اور دوسری طرف   سعودی حکام دعوے کررہے ہیں کہ انھوں  نےکورونا کے پھیلاؤ کے پیش نظراس ملک کے خلاف  حملے بند کردیے ہیں جبکہ جارحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئےنہتے یمنی بچوں اور خواتین کو نشانہ بنا رہے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ  یمن کے خلاف آل سعود کی طرف سے جاری جارحیت اور دہشت گردی پر عالمی براداری نے خاموشی اختیار کررکھی ہے اور کبھی کوئی ردعمل سامنے بھی آتا ہے تو سعودی عرب کے حق میں آتا ہے جیسا کہ اقوام متحدہ  نے حال ہی میں
سعودی عرب کا نام بچوں کے حقوق پامال کرنے والے ممالک کی فہرست سے نکال دیا ہے  ،یہی وجہ ہے کہ یمنی عوام سعودی مظالم میں عالمی برادری کو بھی برابر کا شریک سمجھتے ہیں۔

سحر



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین