یمنی ہوائی اڈے پر آل سعود کی بمباری

سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے منگل کی صبح یمنی دارالحکومت صنعا کے ہوائی اڈے  سمیت متعدد علاقوں پر بمباری شروع کردی۔

ولایت پورٹل:واس نیوز ایجنسی کی رپورٹ  کے مطابق سعودی اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے منگل کی صبح یمنی دارالحکومت صنعا کے علاقوں پر بمباری شروع کی جبکہ سعودی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ یمنی دارالحکومت میں کیے جانے والے حملوں میں فوجی اہداف  کو نشانہ بنایا گیا ہے۔
یمنی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ  اس ملک کے دارالحکومت صنعا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے ارد گرد سعودی اتحادکی جانب سے کیے جانے والے فضائی حملوں میں کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ہے۔
واضح رہے کہ  گزشتہ روز یمنی ذرائع نے یمن کے مختلف علاقوں میں ریاض کی قیادت میں اتحادی افواج کے فضائی حملوں کے جاری رہنے کی اطلاع دی تھی، ذرائع نے بتایا کہ صوبہ تعز کے علاقے البرح، صوبہ صعدہ میں باقم، صوبہ حجہ کے علاقے حرض اور صوبہ مأرب کے علاقے صرواح اور الجوبہ پر سعودی اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے بمباری کی۔
رپورٹ کے مطابق زیادہ تر حملے صوبہ مأرب میں کیے گئے جس کے دوران سعودی لڑاکا طیاروں کی جانب سے الجوبہ کے علاقے کو چھ اور صرواح کے علاقے کو چار بار نشانہ بنایا گیا، دوسری جانب ایک یمنی ذریعے نے یمن کے الحدیدہ میں جارحیت پسندوں اور ان سے وابستہ عناصر کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزی کی اطلاع دی ہے۔
واضح رہے کہ  سعودی عرب نے خطے کے بعض عرب ممالک کے ساتھ مل تقریبا چھ سال  سے یمن کے خلاف بڑے پیمانے پر جارحیت شروع کر رکھی ہے تاکہ یمن کے معزول مفرور صدر عبد المنصور ہادی کو دوبارہ اقتدار میں لایا جا سکے، تاہم یمن کو تباہ کرنے کے ساتھ ساتھ ہزاروں بے گناہ لوگوں کے قتل  کے باوجود بھی سعودی حکومت پر کوئی اثر نہیں ہوا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین