آل سعود نے ٹرمپ کو بھی ٹوپی پہنا دی؛سب تحائف نقلی نکلے

سعودی حکام کی جانب سے ٹرمپ اور ان کے وفد کو دیے گئے تحائف کی تعداد 82 تحائف تھی  جن میں عام سامان جیسے جوتے اور تمغے کے علاوہ کئی قیمتی تحائف شامل تھے،تاہم وہ سب کے سب جعلی نکلے۔

ولایت پورٹل:نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق مئی 2017 میں سعودی عرب کے دورے کے دوران سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شاہی خاندان کی جانب سے بہت سے تحائف وصول کیے،رپورٹ کے مطابق سعودی حکام کی جانب سے ٹرمپ اور ان کے وفد کو دیے گئے تحائف کی تعداد 82 تھی جن میں عام سامان جیسے جوتے اور تمغے کے علاوہ کئی قیمتی تحائف بھی شامل تھے۔
واضح رہے کہ امریکی صدر کی دیے جانے والے تحائف میں سفید شیر اور چیتے کی جلد سے بنے تین کوٹ اور ہاتھی  کےدانت کے ہینڈل والے خنجر سمیت دیگر کئی بہت مہنگے تحائف بھی شامل تھے۔
 اگرچہ امریکی قانون کے تحت ایسے تحائف کا انعقاد خطرے سے دوچار جانوروں کو بچانے کے قانون کی خلاف ورزی کرتا ہے ،تاہم اس کے باجود ٹرمپ نے یہ سب تحائف اپنے پاس رکھے۔
قابل ذکر ہے کہ  ٹرمپ انتظامیہ کے آخری دن وائٹ ہاؤس نے سامان پبلک سروسز ڈپارٹمنٹ کو پہنچا دیا جسے قانونی طور پر امریکی محکمہ مچھلی اور زمینی ماحولیات کو منتقل کرنا ضروری ہے۔
 مڈل ایسٹ نیوز کے مطابق  ایجنسی نے سامان ملنے کے بعد اس کا ٹیسٹ  کیا جس کے نتائج سب کے لیے حیران کن تھے اس لیے کہ تینوں کوٹ مصنوعی چمڑے سے بنے تھے نہ کہ قدرتی چمڑے سے۔
 رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ یہ واضح نہیں ہے کہ سعودی حکام تحائف کی مصنوعییت سے واقف تھے یا نہیں،یادرے کہ  1966 میں  امریکی کانگریس نے ایک قانون منظور کیا جس میں امریکی حکام کو 415 ڈالر سے زائد مالیت کے تحائف رکھنے کی اجازت نہیں ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین