غیر ملکی تارکین وطن کے خلاف آل سعود کے جرائم

انسانی حقوق اور آزادی نامی تنظیم نے افریقی تارکین وطن کے خلاف آل سعود کے جرائم پر زور دیتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ بین الاقوامی قوانین کی پاسداری کرنے کے لیے سعودی حکام پر فوری دباؤ ڈالے۔

ولایت پورٹل:انسانوں کے حقوق اور آزادی تنظیم نے افریقی اور یمنی تارکین وطن کے خلاف سعودی حکام کے جرائم  کی مذمت میں بیان جاری کرتے ہوئے آل سعود کی بدنام زمانہ جیلوں میں ہزاروں افریقی تارکین وطن کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کیا۔
انسانی حقوق اور آزادی کی تنظیم نے تاکید کی کہ بہت سے افریقی تارکین وطن کو تنگ کمروں میں رکھ کر بجلی کی تاروں وغیرہ سے تشدد کا نشانہ بنایا گیا  نیز سعودی حکام کی جانب سے کمروں کے فرش گیلے کرنے کے بعد انہیں بجلی کے جھٹکے دیے گئے جب کہ بہت سارے سعودی سرحدی محافظوں کے ہاتھوں مارے گئے۔
انسانی حقوق کی اس تنظیم نے مزید تاکید کی کہ ہم بین الاقوامی اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ سعودی حکومت کے ان اقدامات کی مذمت کریں جو بین الاقوامی اور انسانی اصولوں سے متصادم ہیں  نیز اس ملک میں تارکین وطن کو تحفظ  فراہم کیا جائے۔
انسانی حقوق اور آزادی کی تنظیم نے بین الاقوامی برادری سے سعودی حکام پر بین الاقوامی قوانین کی پاسداری کرنے کے لیے دباؤ ڈالنے کا مطالبہ بھی کیا، واضح رہے کہ حال ہی میں سعودی سرحدی محافظوں کے ہاتھوں سے بچ جانے والے افریقیوں نے ان محافظوں کے خوفناک جرائم کا انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ سعودی فوجی روزانہ 5 ایتھوپیائی تارکین وطن کو قتل کرتے ہیں جبکہ سعودی سرحدی محافظوں نے درجنوں ایتھوپیائی تارکین وطن کو اجتماعی طور پر ہلاک کیا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین