Code : 2991 145 Hit

عین الاسد سےصحرائے الانبار میں داعش کی مدد کیے جانے کا انکشاف

عراقی عوامی تنظیم بدر اور الحشد الشعبی تنظیم کے ایک کمانڈر نے دہشت گردوں کو معلومات فراہم کرنے اور الانبار صحرا سے مائنوں کی صفائی آپریشن مکمل نہ کرنے میں اسد کے اڈے پر موجود امریکی فوجیوں کے کردار کا اعلان کیا ہے۔

ولایت پورٹل؛المعلومہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے م طابق الانبار صوبے میں بدر تنظیم سے تعلق رکھنے والے اور الحشد الشعبی کے کمانڈر ، قصی الانباری نے آج بتایا کہ اسد کے اڈے پر موجود امریکی فوجیوں نے الحشد الشبعی کی سکیورٹی کارروائیوں کے بارے میں داعش کواہم معلومات فراہم کیں۔
انھوں نے صحرائے الانبارکو دہشتگردوں کی جانب سے بچھائے گئے مائنوں سے صاف کرنے اور عراقی سرزمین تک دہشت گردوں کی تمام سرنگوں اور رسائی کے راستوں کو بند کرنے کے لئے حفاظتی آپریشن جاری رکھنے کی ضرورت پر بھی زور دیتے ہوئے کہا کہ الانبار عراق کا سب سے بڑا صحرا ہےاوراس میں پائی جانے والی  بہت ساری اونچائیوں اور کھائیوں  کی وجہ سے شام سے عراق آنے والے دہشت گردوں کے لیے اب بھی یہ ایک محفوظ ٹھکانہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ  یہ صحرا صوبہ انبار اور اس کے ہمسایہ صوبوں کے لئے بڑا خطرہ  ہے لہذا اس سے دہشت گرد وں کے خاتمے کے لئے مسلسل سکیورٹی کارروائیوں کی ضرورت ہے ۔
تاہم اس صحرا میں دہشت گرد تنظیموں کے خلاف بعض اوقات آپریشن کیے جاتے ہیں۔
الانباری نےاس سلسلہ میں مزید کہا کہ عراقی سکیورٹی فورسز اور الحشد الشعبی نےموصل سے انبار ، کربلا اور السموی نیز سعودی عرب اور اردن کی سرحد سے متصل صحرا کو صاف کرنے کا کام شروع کیالیکن ان  صحراؤں کا صفایا عین اسد اڈے پر امریکہ کی موجودگی کی وجہ سےمکمل نہیں ہوا سکا۔
انہوں نے وضاحت کی کہ  امریکی فوجیں داعش کو ضروری معلومات فراہم کررہی ہیں کیونکہ وہ داعش کے خلاف عراقی سکیورٹی آپریشنز کو نظر میں رکھتی ہیں۔







0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम