Code : 3012 73 Hit

جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کے بعدامریکی فوجیوں میں خوف وہراس پایا جاتا ہے:واشنگٹن پوسٹ

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے امریکہ کے ہاتھوں جنرل قاسم سلیمانی کے قتل اور اس کےاور ایران کی انتقامی کاروائی کے بارے میں ایک رپورٹ شائع کی ہے۔

ولایت پورٹل:واشنگٹن پوسٹ نے امریکہ کے ہاتھوں جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد بعدامریکی فوجیوں میں پائے جانے والے  خوف وہراس کے سلسلہ میں  ایک رپورٹ شائع کی ہے جس میں لکھا ہے کہ  امریکی فوجی مبصرین  کا کہنا ہے کہ جنرل سلیمانی کے قتل کے بعد ایران کی جانب سے درپیش خطرات  میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے۔
واشنگٹن پوسٹ نے لکھا ہے کہ امریکی جنگی بیڑے یو ایس ایس نور ماندی کے کپتان نے بغداد ایئر پورٹ کے قریب امریکی آپریشن کے چند گھنٹوں بعد اس بیڑے میں تعینات فوجیوں کو بتایا کہ امریکہ نے ایک ڈرون حملے میں ایران کے سب سے طاقتور فوجی کمانڈر کو ہلاک کردیا ہے۔
نورماندی کے کمانڈر کرسٹوفر اسٹون نے کہا کہ یہ واضح نہیں ہے کہ ایران کا اس  کے بارے میں کیا رد عمل ہوگا  لیکن نورماندی کو کسی بھی حادثہ  کے لئے تیار رہنے کی ضرورت ہے۔
واشنگٹن پوسٹ نے مزید لکھا ہے کہ اسٹون نے عملے کو بتایا کہ ہمیں براہ راست فوجی کارروائی کے لئے تیار رہنا ہے۔
اس انتباہ اور خطرہ میں اضافے کے بعد ، امریکی بحریہ جنگ کے لئے تیار تھی۔
اس کے بعد نورماندی میں نئی احتیاطی تدابیر اختیار کی گئیں  جس کے تحت وہ انٹرنیٹ لائن بھی کاٹ دی گئی جس کے ذریعہ  وہاں تعینات فوجی اپنے کنبے کے ساتھ بات چیت کرتے تھے۔
نورماندی بیڑے میں اسلحہ کی نگرانی کرنے والے ڈیوڈ ریمرز نے کہا کہ میں نے ابھی تک کسی کو نہیں دیکھا ہے  جس نے اس علاقے میں اس حد تک خطرہ  کا تجربہ کیا ہو۔
انھوں نے مزید کہا کہ میں ان افراد کے تجربہ کی روشنی میں بات کررہا ہوں جنہوں نےسنگین حالات کا مشاہدہ کیا ہے  کہ اس حد تک خطرہ اس سے پہلے میں نے  محسوس نہیں کیا تھا۔




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین