Code : 1645 37 Hit

اسلامی انقلاب کے بعد ایران ایک خود کفیل ملک بن چکا ہے:آیت اللہ خامنہ ای

انقلاب اسلامی سے پہلے ایران کے تمام علم و صنعت کا دار و مدار مغرب پر تھا۔ میں نے یہ بات بارہا بتائی ہے کہ فوجی ہوائی جہاز کا اگر کوئی پرزہ خراب ہوجاتا تھا تو مغرب کی طرف سے ہمارے انجینئروں کو اسے کھول کر دیکھنے کی بھی اجازت نہیں تھی۔ لیکن انقلاب کے بعد علمی اور ملّی اعتماد پیدا ہوا، مختلف شعبوں میں بڑے بڑے صاحبان علم و فن نے جنم لیا۔ آج ہمارے پاس دنیا کے کم نظیر صاحبان علم موجود ہیں اگر ان جیسے افراد ہیں بھی تو معدودے چند ہیں، ہمارے فنکار جوان بھی ہیں اور ترقی یافتہ بھی۔

ولایت پورٹل: انقلاب اسلامی سے پہلے ایران کے تمام علم و صنعت کا دار و مدار مغرب پر تھا۔ میں نے یہ بات بارہا بتائی ہے کہ فوجی ہوائی جہاز کا اگر کوئی پرزہ خراب ہوجاتا تھا تو مغرب کی طرف سے ہمارے انجینئروں کو اسے کھول کر دیکھنے کی بھی اجازت نہیں تھی درست کرنے کی بات تو بہت دور کی ہے۔ اس پرزہ کو ہوائی جہاز کے ذریعہ امریکہ لے جایا جاتا تھا پھر دوسرا پرزہ لاکر اس میں فٹ کیا جاتا تھا یا اگرتعمیر کرنے کی ضرورت ہوتی تھی تو یہ کام بھی وہیں انجام پاتا تھا۔ اگر یہاں کوئی صنعت تھی تو وہ بہت معمولی صنعت ہو جس میں کوئی جدت نہیں پائی جاتی تھی۔ انقلاب کے بعد علمی اور ملّی اعتماد پیدا ہوا، مختلف شعبوں میں بڑے بڑے صاحبان علم و فن نے جنم لیا۔ آج ہمارے پاس دنیا کے کم نظیر صاحبان علم موجود ہیں اگر ان جیسے افراد ہیں بھی تو معدودے چند ہیں، ہمارے فنکار جوان بھی ہیں اور ترقی یافتہ بھی۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम