فلسطینی عوام کی حمایت کرنے پر ملائیشیا کے خلاف کاروائی ؛ حماس کا پراظہار افسوس

حماس نے کوالالمپور حکام کی جانب سے صیہونی کھلاڑیوں کو ویزے جاری کرنے کی مخالفت کو سراہتے ہوئے ملائیشیا میں عالمی اسکواش ٹورنامنٹ کی میزبانی کی منسوخی کو صیہونی مجرموں کی حمایت کی علامت قرار دیا۔

ولایت پورٹل:العہد نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک (حماس) نے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی ملائیشیا کی مخالفت اور صیہونی اسکواش کھلاڑیوں کے ملائیشیا میں داخلے کی مخالفت کا خیر مقدم کیا ہے،تاہم ملائیشیا کی جانب سے صیہونی کھلاڑیوں کو ویزے دینے سے انکار کے بعد ملائیشیا میں ہونے والی ورلڈ اسکواش چیمپئن شپ منسوخ کردی گئی۔
حماس تحریک نے ملائیشیا کے بادشاہ، حکومت اور عوام کے صیہونی حکومت کے ساتھ ہر طرح کےتعلقات  معمول پرلانے کی مخالفت کرنے کے تاریخی عزم کا سراہنا کیا ہے، جس پر ملائیشیا نے حالیہ برسوں میں بارہا زور دیا ہے اور اپنے اس موقف پر باقی رہنے کا اظہار کیا ہے۔
حماس نے صیہونی وفود کے بغیر ٹورنامنٹ اور دیگر بین الاقوامی مقابلوں کی میزبانی کا حق حاصل کرنے میں ملائیشیا کے ساتھ تحریک کی یکجہتی پر زور دیا اور کہا کہ اسے اس بات پر افسوس ہے کہ انٹرنیشنل اسکواش فیڈریشن نے ملائیشیا سے ٹورنامنٹ کی میزبانی کا حق منسوخ کر دیا ہے۔
بیان میں کہا گیا ہےکہ صیہونی حکومت جس نے فلسطین کی سرزمین اور عوام پر غاصبانہ حملہ کیا ہے، اس کے مقدسات کی بے حرمتی کی ہے ، فلسطینی نوجوانوں کے خلاف ہر قسم کا جرم کیا ہے اور فلسطینی کھیلوں کے شعبے کو تباہ کرنے کے درپے ہے، یہ مجرمانہ حکومت بین الاقوامی میدانوں میں موجودگی کی مستحق  نہیں ہےجبکہ اسے اپنے جرائم کے لیے جوابدہ ہونا چاہیے اور تمام شعبوں میں اس پر مقدمہ چلایا جانا چاہیے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین