Code : 2352 76 Hit

اسرائیل اور لبنان کی ممکنہ جنگ میں صہیونیوں کے شانہ بشانہ لڑنے کے لیے تیار ہیں:سعودی قلمکار

فلسطین کے مخالف اور صہیونیوں کے حامی معروف سعودی قلمکار عبدالحمید الغبین نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ صہیونیوں کو لبنان پر حملہ کر دینا چاہیے ۔

ولایت پورٹل:لندن میں سکنت پذیر سعودی عرب کے معروف قلمکار عبدالحمید الغبین نے ٹوئیٹر کے اپنے صفحے پر صاف الفاظ میں لکھا ہے کہ لبنان اور اسرائیل کےدرمیان ممکنہ جنگ میں وہ صہیونیوں کے شانہ بشانہ لڑنے کے لیے تیار ہیں ،المیا دین نیوز چینل نے اپنی ویب سائٹ پر لکھا ہے کہ سعودی عرب کے معروف قلمکار نے صہیونی حکام کو مشورہ دیا ہے کہ وہ جنوبی لبنان پر حملہ کرکے حزب اللہ کو ختم کر دیں اور کہا ہے کہ اس حملہ  میں اکثر عرب ممالک اسرائیل کی حمایت کریں گے ، یاد رہے الغبین نے صہیونی حکومت کو حکومت صلح اور حزب اللہ کو ایران کا بگڑا ہوا چہرہ قرار دیا ہے جس کو لے کر صہیونی حلقوں میں ان کی تعریف کی جارہی ہے جبکہ عربی میڈیا میں انہیں تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے ،الغبین  لندن میں قائم پولٹیکل ریسرچ اسکول کے سربراہ ہیں اور اپنے آپ کو سعودی عرب کی 50 با اثر شخصیتوں میں  ایک سمجھتے ہیں یہ صہیونی ریاست کے ساتھ مکمل صلح ،تال میل اور معمول کے مطالق  روابط چاہتے ہیں،انہوں نے رواں سال  جون کے مہینے میں کہا تھا کہ فلسطینیوں کا اصلی ملک ار دن ہے اور کسی بھی طرح سے ان کے شر سے نجات حاصل کرنا ہوگی ،اردن سے ان کی مراد وہی نکتہ ہے جو امریکہ کے سینچری  ڈیل معاملے میں آیا ہے جہاں فلسطینیوں کو سکونت اختیار کرنے کے لیے کہا گیا ہے جس کی وجہ سے اردن کے بادشاہ اعتراض کیا اور اسی بنا پر انھوں نے اس معاملے کی مخالفت بھی کی ہے،الغبین نے  اس سے پہلے بھی اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا تھا کہ سعودی عرب عنقریب امریکہ کی حمایت سے  آرامکو پر ہونے والے ڈرون حملوں کے جواب میں ایران پر حملہ کرے گا اس کی وجہ سے ان کافی مذاق بھی اڑایا گیا اور سوشل میڈیا پر انہیں یاد دلایا گیا کہ سعودی حکام کچھ  ہفتوں میں یمن کی تنظیم انصاراللہ پر غلبہ حاصل کرنے کی باتیں کر رہے تھے  اس کا کیا ہوا۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम