Code : 4068 21 Hit

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں خوفناک دھماکہ؛دسیوں افراد جاں بحق،سیکڑوں زخمی

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں منگل کو ایک ہولناک دھماکہ ہوا ہے جس میں سیکڑوں لوگوں کے زخمی ہونے کا خدشہ ہے۔

ولایت پورٹل:لبنان کے الیمادین چینل کی روپورٹ کے مطابق ابھی تک اس واقعے کے بارے میں کوئي سرکاری بیان سامنے نہیں آيا اور اسی طرح اس میں زخمی ہونے والوں کی صحیح تعداد کا بھی علم نہیں ہو سکا ہے تاہم المیادین ٹی وی چینل کا کہنا ہے کہ سیکڑوں لوگ زخمی ہوئے ہیں، بیروت میں متعین العالم کے نمائندے نے بتایا ہے کہ یہ دھماکہ بیروت کی بندرگاہ کے اسٹور نمبر بارہ میں اشتعال انگیز مواد میں آگ لگنے کی وجہ سے ہوا ہے، اس دھماکے  کے متعدد ویڈیو سامنے آئے ہیں جن میں دکھایا گيا ہے کہ دھماکہ اتنا شدید تھا کہ کافی اونچائي تک دھویں کا ستون نظر آ رہا ہے۔
العالم کے رپورٹر نے بتایا ہے کہ اس دھماکے سے بہت زیادہ نقصانات ہوئے ہیں اور بڑی تعداد میں لوگ زخمی ہوئے ہیں جنھیں ایمبولینسوں کے ذریعے اسپتالوں تک پہنچایا گيا، رپورٹوں میں بتایا گيا ہے کہ دھماکے کی آواز کئی کلو میٹر دور اور صیدا شہر تک سنائي دی،بیروت کے گورنر مروان عبود نے کہا ہے کہ نقصانات کا دائرہ بہت زیادہ وسیع ہے۔
المیادین نے بیروت کی بندرگاہ میں ہونے والے دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ابتدائی معلومات سے معلوم ہوا ہے کہ یہ دہشت گردی کا دھماکہ نہیں تھاتاہم الجزیرہ  چینل نے کہا ہے کہ  دھماکے کے مقام اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں وسیع پیمانہ پر مالی نقصان ہونے کا خدشہ ہے۔
واضح رہے کہ لبنانی وزیر اعظم حسن دیاب نے اعلان کیا  ہےکہ کل (بدھ) کو دھماکے اور اس کے نتیجہ میں ہونے والے بھاری جانی نقصان پر عوامی سوگ منایا جائے گا، لبنان کے صدر مشیل آؤون نے بھی ملک کی سپریم ڈیفنس کونسل کاہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔
ادھر امریکی صدارتی محل نے بھی ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ بیروت کی بندرگاہ میں ہونے والے خوفناک دھماکے پر کڑی نگرانی کر رہا ہےاور امریکی محکمہ خارجہ نے اپنے شہریوں کو  جائے وقوع سے دور رہنے کی تاکید کی ہے،صیہونی حکام کا کہنا ہے کہ یہ اس واقعہ کا ہم سے کوئی تعلق نہیں ہے اور یہ ہم نے نہیں کیا ہے۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین