ابھی تو ایک کشتی ڈوبی ہے ابھی بہت کچھ ہونا باقی ہے؛قدس فورس کے کمانڈر کا امریکہ اور اسرائیل سے خطاب

پاسداران انقلاب اسلامی کی بین الاقوامی وننگ سپاہ قدس کے کمانڈر اور جنرل قاسم سلیمانی کی جگہ آنے والے جنرل اسماعیل قاآنی نے امریکی بحری بیڑے میں آتشزدگی پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بہت مشکل دن امریکہ اور صیہونی حکومت کے منتظر ہیں

ولایت پورٹل:العالم نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق قدس فورس کے کمانڈر سردار اسماعیل قاآنی نے مزاحمتی کمانڈروں کے ایک گروپ میں امریکی بحری بیڑے "یو ایس ایس بونہم کے رچرڈ" پر آگ لگنےکی واردات کے  سلسلہ میں رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج ریاستہائے متحدہ میں جو کچھ ہوا ہے ، خاص کر بحری بیڑے کا تباہ ہونا  یہ امریکی حکومت کے اقدامات اور طرز عمل کا نتیجہ ہے اور یہ خدائی وعدہ ہے کہ جو بھی ظلم و زیادتی کا مرتکب ہوگا اسے الہی عذاب کا مزہ چکھنا پڑے گاچونکہ انہوں نے خدا کے کلام کو بدلا ،ظلم اور جرائم کا ارتکاب کیا تو خدائی غضب اور عذاب میں پھنس گئے۔
انہوں نے کہا کہ امریکیوں کو مجرم کی تلاش نہیں کرنی چاہئے اور دوسروں پر الزام لگانا نہیں چاہئے ، یہ وہ آگ ہے جس کو انھوں نے خود جلایا ہے اور آج اس نے انھیں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے،آپ کو معلوم ہوناچاہئے کہ یہ آپ کے ان جرائم کا جواب ہے جو آپ کے اپنے عناصر کے ہاتھوں انجام پائے ہیں، خدا آپ کو آپ کے  ہاتھوں سے سزا دے رہا ہے۔
العالم کے مطابق ، آئی آر جی سی کی قدس فورس کے کمانڈر نے امریکی حکومت کو یاد دلایاکہ یہ تو آپ کے خوشی کے دن ہیں ابھی آپ اور صیہونی حکومت کے لیےبہت مشکل دن اور مشکل واقعات آنے والے ہیں،جنرل قاآنی نے مزید کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ امریکی فوج تھک گئی ہے اور تنگ آچکی ہے، ان کا جنگی ساز وسامانی لوہے کے ڈھیر میں تبدیل ہوچکا ہے، امریکی بحریہ کے کمانڈروں نے طویل عرصے سے کہہ رہے ہیں کہ ان کے جہاز لوہے کے ٹکڑوں کے علاوہ کچھ نہیں ہیں، امریکہ کو چاہئے کہ وہ اس کی خراب صورتحال کو قبول کرے اور انسانیت پر مزید ظلم نہ کرے۔
   

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین