صیہونیوں درندوں کے ہاتھوں حماس کے مزید 3 رہنما گرفتار

صیہونی حکومت نے فلسطین کے قومی انتخابات میں اسلامی مزاحمتی تحریک "حماس" کی شرکت کو سبوتاژ کرنے کی اپنی مخالفانہ کوششوں کو مزید تیز کرتے ہوئے اس تحریک کے تین دیگر اراکین کو گرفتار کرلیا۔

ولایت پورٹل:فلسطین ٹوڈے کی رپورٹ کے مطابق  صیہونی حکومت فلسطینی قومی انتخابات میں اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کی شمولیت کو سبوتاژ کرنے کے لئے اس تحریک کے خلاف اپنے مخالفانہ اقدامات جاری رکھے ہوئے ہے، رپورٹ کے مطابق صہیونیوں نے آج صبح مغربی کنارے کےمتعدد علاقوں پر چھاپہ مارا اور 25 فلسطینیوں کوگرفتار کیا۔
 فلسطینی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ حراست میں لیے جانے والوں میں حماس تحریک کے تین اراکین بھی شامل ہیں، رپورٹ کے مطابق صیہونیوں نے حماس کے ممبران انس رصرص ، عمر القواسمی اور شیخ مصطفی شاور کو گرفتار کرلیا،یادرہے کہ صہیونی مغربی کنارے میں حماس کے متعدد رہنماؤں کو پہلے ہی گرفتار کر چکے ہیں، قبل ازیں حماس کے سینئر رکن حسام بدران نے کہا تھاکہ صیہونی حکومت کی فوج کے ذریعہ فلسطینی امیدواروں کی نظربندی ہمارے اندرونی معاملات میں واضح مداخلت ہے۔
 حماس کے رکن نے اس بات پر زور دیا کہ ان کی تحریک ہر حالت میں پارلیمانی انتخابات میں بڑھ چڑھ کر حصہ لےگی، انہوں نے کہاکہ امیدواروں کو گرفتار کرنا یا ان کو طلب کرنا ، خاص طور پر" قدس ہمارا وعدہ ہے "کی فہرست کے نمائندں کی گرفتاریاں فلسطین کے اندرونی معاملات میں صریح مداخلت اور انتخابات کے انعقاد کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کی کوشش ہے۔
 بدران نے کہا کہ ان کی تحریک نے علاقائی اور بین الاقوامی جماعتوں کے ساتھ وسیع رابطے قائم کیے ہیں اور صیہونی حکومت پر دباؤ ڈالنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ وہ فلسطین کے داخلی امور اور انتخابی عمل میں کسی بھی طرح کی مداخلت کو روکیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین