افغانستان میں 24 ملین افراد کو انسانی امداد کی ضرورت ہے: اقوام متحدہ

کابل میں اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین (یو این ایچ سی آر) نے کہا کہ  اس ملک میں نقل مکانی کے مسئلے کی وجہ سے لاکھوں افغانوں کو انسانی امداد کی ضرورت ہے۔

ولایت پورٹل:اقوام متحدہ کے انڈر سکرٹری جنرل برائے مہاجرین لی کلیمینٹس  نے افغانستان کے دار الحکومت کابل کے اپنے دورے کے دوران کہا کہ لاکھوں افغانوں کے بے گھر ہونے کی وجہ سے افغانستان میں انسانی ضروریات بہت زیادہ ہیں، انہوں نے اپنے دورہ کابل کے مقصد کے بارے میں کہا کہ میں نے افغانستان کا سفر کیا تاکہ ان لوگوں کی مدد کی جا سکے جو افغانستان واپس آئے ہیں، ساتھ ہی ساتھ خواتین اور بچوں کے حقوق اور معاشرے میں ان کی شرکت کی صلاحیت کے دفاع کے لیے تعاون کیا جائے۔
واضح رہے کہ اقوام متحدہ نے پہلے بھی کہا تھا کہ افغانستان میں 24 ملین افراد کو انسانی امداد کی ضرورت ہے، اقوام متحدہ کے ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی کے ایک وفد جس نے افغانستان میں انسانی صورتحال کا جائزہ لیا ہے، نے کہا کہ اس ملک ملک میں انسانی امداد کی ضرورت کی سطح بہت زیادہ ہے  اس لیے کہ افغانستان کی آبادی کا تقریباً 59 فیصد حصہ یعنی اور 24 ملین سے زائد افراد  کو امدادی امداد کی ضرورت ہے۔
اقوام متحدہ کے دفتر برائے رابطہ برائے انسانی امور(OCHA) کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں وفد نے افغانستان میں انسانی ہمدردی کے کاموں میں تعاون پر زور دیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین