بن سلمان کے بیرون ملک اپنے مخالفین کو کچلنے کے لیے 24 ملین ڈالر مخصوص

خبر رساں ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ سعودی ولی عہد نے حال ہی میں ملک سے باہر اپنے مخالفین کو دبانے کے مقصد سے ایک سکیورٹی یونٹ کا آغاز کیا ہے۔

ولایت پورٹل:باخبر ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے بیرون ملک سعودی عرب کی مخالفت کو دبانے کے مقصد سے سکیورٹی یونٹ کے قیام کے لیے 24 ملین ڈالر مختص کیے ہیں، الجزیرہ مرر کے مطابق باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ محمد بن سلمان نے مذکورہ یونٹ کے مالی مطالبات فوری طور پر فراہم کرنے پر رضامندی ظاہر کی اور حکم دیا کہ اس یونٹ کی سکیورٹی فورسز کو زیادہ تنخواہیں دی جائیں اور انہیں جدید آلات فراہم کیے جائیں۔
 ذرائع نے اس بات پر بھی زور دیا کہ یہ یونٹ براہ راست اسٹیٹ سکیورٹی سروس سے منسلک ہیں جو محمد بن سلمان کی نگرانی میں ہے، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ سعودی ولی عہد نے اپوزیشن اور مخالفین کو دبانے کے لیے نگرانی اور جاسوسی کے تمام طریقے استعمال کرنے کا حکم دیا ہے، لاپرواہ سعودی شہزادے نے سعودی عرب کے اندر ان تمام لوگوں کو نشانہ بنانے، مقدمہ چلانے اور گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے جو بیرون ملک حزب اختلاف سے رابطے میں ہیں، اس سے قبل ہیومن رائٹس واچ نے کہا تھا کہ محمد بن سلمان ایک بے رحم آمر ہیں جو سعودی عرب میں ان کی رائے سے اختلاف رکھنے والوں کو بے دردی سے کچل دیتے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین