افغانستان میں24 گھنٹوں میں 193 طالبان دہشتگرد ہلاک

افغانستان کی وزارت دفاع نے آج اعلان کیا ہے کہ پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران 15 صوبوں میں 303 طالبان ارکان ہلاک اور زخمی ہوئے۔

ولایت پورٹل:افغانستان کی وزارت دفاع نےاپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران طالبان عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائیوں میں اس گروہ کے 193 ارکان مارے گئے ہیں، افغان وزارت دفاع کے مطابق یہ کاروائیاں ننگرهار، میدان وردک، غزنی، ارزگان، قندهار، زابل، هرات، فراه، سمنگان، هلمند، قندوز، بغلان، تخار، پروان اور  کاپیسا کے 15 صوبوں میں کی گئی ہیں۔
 بیان کے مطابق ، افغان فوج اور پولیس فورسز کے آپریشن میں 110 طالبان ارکان زخمی بھی ہوئےجبکہ متعدد صوبوں میں بڑی تعداد میں طالبان کی جانب سے نصب بارودی سرنگیں بھی دریافت کی گئیں  اور اس گروپ سے وابستہ اسلحہ اور گولہ بارود کو تباہ کردیا گیا۔
یادرہے کہ  ایک طرف افغانستان میں امن و استحکام کے قیام کے لئے کوششیں جاری ہیں اور دوسری طرف اس ملک کے مختلف حصوں میں سکیورٹی فورسز اور طالبان کے مابین جھڑپوں میں شدت پیدا ہوگئی ہےجبکہ قطر کے دارالحکومت دوحہ میں بین - افغان مذاکرات کا ایک نیا دور جاری ہےاور پورے افغانستان میں طالبان اور سکیورٹی فورسز کے درمیان جھڑپوں میں اضافہ ہوا ہے۔
یادرہے کہ  افغانستان سے امریکی دہشت گردوں کے زیرقیادت غیر ملکی قبضہ کاروں کی واپسی کے آغاز کے ساتھ ہی  واشنگٹن اس ملک میں بڑھتی ہوئی عدم تحفظ کو بہانے کے طور پر استعمال کرنے کی کوشش کر رہا ہے تاکہ یہ ثابت کر سکے ہیں کہ اسی کی وجہ سے اس ملک میں امن قائم ہے اور اگر وہ یہاں سے چلا جائے گا تو یہاں خانہ جنگی شروع ہو جائے گی جس کا وہ انتباہ بھی دے چکے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین