Code : 2297 219 Hit

کہیں شام پر ترکی کے حملے امریکی سازش کا نتیجہ تو نہیں؟

یاد رہے کہ چند دن پہلے امریکہ کے کرد علاقہ سے نکلنے کے بعد ایک مرتبہ پھر ترکی نے حملات تیز کردیئے ہیں۔ بہت سے تجزیہ نگاروں کا کہنا یہ کہ رجب طیب اردغان امریکی ایماء پر کام کررہے ہیں اور ان کا ٹارگیٹ داعشیوں کو شام سے نکال کر کسی اور علاقہ میں داخل کرنا ہے۔

ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق شمال مشرقی شام کے کرد ریجن میں ترکی کا فوجی آپریشن جاری ہے جس کے بعد ترکی کے شامی سرحدی صوبے ماردین کے شہر نصیبین پر شامی کرد ملیشیا نے راکٹ حملے کئے ہیں۔
شامی کردوں کے راکٹ حملوں میں 10 ترک شہری ہلاک اور 35 سے زائد زخمی ہوئے جنہیں طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کردیا گیا جبکہ حملے میں متعدد گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔
دوسری جانب ترک صدر طیب اردوان نے ایک بار پھر آپریشن روکنے کیلئے عالمی دباؤ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ شمالی شام میں آپریشن نہیں روکیں گے۔ لوگ جو بھی کہیں، ہم پیچھے نہیں ہٹیں گے۔
ایک تقریب سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ آپریشن ہمارے کرد بھائیوں کے خلاف نہیں ہے بلکہ دہشت گرد تنظیموں کے خلاف ہے۔
یاد رہے کہ چند دن پہلے امریکہ کے کرد علاقہ سے نکلنے کے بعد ایک مرتبہ پھر ترکی نے حملات تیز کردیئے ہیں۔ بہت سے تجزیہ نگاروں کا کہنا یہ کہ رجب طیب اردغان امریکی ایماء پر کام کررہے ہیں اور ان کا ٹارگیٹ داعشیوں کو شام سے نکال کر کسی اور علاقہ میں داخل کرنا ہے۔
 


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम