Code : 1156 62 Hit

ہم اپنے رزق کو حرام طریقہ سے حاصل نہ کریں

امام علی علیہ السلام نے فرمایا: انسان بے صبری اور جلد بازی میں خود کو حلال روزی سے محروم کرلیتا ہے جبکہ اسے مقدر شدہ رزق سے زیادہ نصیب نہیں ہوتا۔

ولایت پورٹل: امام علی علیہ السلام نے ایک شخص سے فرمایا:’’میرے خچر کو دیکھتے رہنا میں مسجد سے نماز پڑھ کر آتا ہوں‘‘۔
چنانچہ جب حضرت امیر علیہ السلام مسجد میں چلے گئے اس شخص نے خچر کی لگام کو چرایا اور وہاں سے بھاگ گیا۔
کچھ دیر کے بعد جب امام علی علیہ السلام مسجد سے واپس تشریف لائے تو آپ کے ہاتھ میں 2 درہم تھے جنہیں آپ اس شخص کو دینا چاہتے تھے لیکن جب باہر آئے کہ خچر بغیر لگام کے ہی کھڑا ہے اور اسے وہ شخص چرا کر بھاگ گیا ہے۔
امام علیہ السلام نے وہ 2 درہم قبر کو دیئے تاکہ وہ بازار سے جاکر ایک دوسری لگام خرید لائے ۔قنبر بازار گئے تو دیکھا ایک دوکان پر وہی چرائی گئی لگام لٹکی ہوئی ہے انہوں نے دوکاندار سے جاکر اسے 2 درہم میں خریدا اور واپس آکر مولا کے حوالے کردیا۔
تو امام علی علیہ السلام نے فرمایا: انسان بے صبری اور جلد بازی میں خود کو حلال روزی سے محروم کرلیتا ہے جبکہ اسے مقدر شدہ رزق سے زیادہ نصیب نہیں ہوتا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
منبع:
شرح نهج البلاغة،ابن ابی الحدید معتزلی، ج 3 ، ص 160۔
 


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम