Code : 655 51 Hit

کشمیر کے معروف عالم دین سید ارشد موسوی کے انتقال پر رہبر معظم کے نمائندہ کی طرف سےاظہار تعزیت

کشمیر کے معروف عالم دین سید ارشد موسوی کی عمر 48 برس کے لگ بگھ تھی اور وہ بدھوار کے دن اچانک اسٹروک آنے کے سبب انتقال کرگئے۔

ولایت پورٹل:کشمیر کے معروف عالم دین و کالم نویس مولانا سید ارشد موسوی بدھوار کو اچانک انتقال کرگئے،سید ارشد موسوی کی عمر 48 برس کے لگ بگھ تھی اور وہ بدھوار کے دن اچانک اسٹروک آنے کے سبب انتقال کرگئے،مولاناارشد موسوی ایک عالم دین ہونے کے ساتھ ساتھ ایک بہترین کالم نویس بھی تھے، انہوں نے اپنی تمام عمر قوم اور ملت کی علمی، دینی ،سماجی اور تبلیغی خدمات میں گزاری، ان کی انتقال کی خبر سن کر وادی بھرمیں ان کے جاننے والوں کے اندر غم کی لہر دوڈ گئی ،سید ارشد موسوی قاضی پورہ نور کھا، اوڑی میں پیدا ہوئے اور وہیں بنیادی تعلیم حاصل کی،بارہویں جماعت پاس کرنے کے بعد انہوں نے اسلامیات کو اختیار کیا اور جامعہ علمیہ امام رضا گنڈ حسی بٹ میں 7سال تک دینی تعلیم حاصل کی اور اس کے بعد مزید تعلیم حاصل کرنے کی غرض سے ایران چلے گئے۔ ایران سے فارغ تحصیل ہونے کے بعد انہوں نے یہاں کئی اسلامی انجمنوں کے ساتھ بحیثیت مبلغ و مدرس کام کیا جن میں، تنظیم المکاتب کشمیر، جامعہ علمیہ امام رضا ؑ گنڈ حسی بٹ ،جامعہ باب العلم بڈگام اور جامعہ امام جعفر صادق شادی پورہ وغیرہ قابل ذکر ہیں،مولانا ارشد حسین موسوی ان دنوں گنڈ حسی بٹ لاوے پورہ سرینگر میں مقیم تھے اور بدھوار کو انہیں اچانک اسٹروک آیا جس کے بعد انہیں صورہ اسپتال پہنچایا گیا جہاں وہ داعی اجل کو لبیک کہہ گئے، ان کے انتقال پر جہاں وادی کے بزرگ علماء نےتعزیت نامے ارسال کیے وہیں ہندوستان میں رہبر معظم کے نمائندہ حجت الاسلام  والمسلمین آقائے مہدوی پور نےاس عظیم سانحہ ارتحال پرا مام زمانہ(عج) کی خدمت میں تسلیت عرض کرتے ہوئےحوزہ علمیہ کے سربراہ حجت الاسلام ولمسلمین آغا سید حسن موسوی ، حوزہ کے اساتذہ اور طلاب کو تعزیت پیش کی نیز مولانا مرحوم کے لوحقین کے اظہار ہمدردی کیا اور انھیں صبر کی تلقین کی۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम