Code : 766 15 Hit

ملک سلمان 10منٹ کی لکھی ہوئی تقریر پڑھنے میں 10بار بھولے!!!

سعودی عرب کے آلزائمر کا شکار بادشاہ ملک سلمان کو شرم الشیخ کانفرانس میں خود اس لیے جانا پڑا کیوں کہ باقی ممالک نے بن سلمان کے اس کانفرانس میں شریک ہونے کی اجازت نہیں دی۔

ولایت پورٹل:بھولنے کی بیماری کا شکر سعودی عرب کے باردشاہ ملک سلمان نے شرم الشیخ کانفرانس میں  دن منٹ تقریر کی  جو پوری ایران کے خلاف تھی ،باوجود اس کہ پوری تقریر لکھی ہوئی تھی لیکن پھر بھی  وہ اس میں دس جگہ بھول گئے جس کی وجہ سے میڈیا میں ان کا جم کا مذاق اڑایا گیا،یاد رہے کہ مصر کے شہر شرم الشیخ میں عربی اور یورپی 16ممالک کے نمائندوں نے دوروزہ کانفرانس منعقد کی  جس میں سعودی عرب کے آلزائمر کا شکار بادشاہ ملک سلمان کو خود اس لیے جانا پڑا کیوں کہ باقی ممالک نے بن سلمان کے اس کانفرانس میں شریک ہونے کی اجازت نہیں دی،شاہ سلمان نے دس منٹ کی لکھی ہوئی تقریر پرھ کر سنائی  جو صرف ایران کے خلاف تھی جس میں انھوں نے الزام لگایا کہ ایران یمن کی مزاحتمی تنظیم انصار اللہ اور خطہ کی دیگر تنظیموں کو اسلحہ فراہم کرتا ہے لہذا عالمی برادری کو اس کے خلاف متحد ہوکر اس کو پر امن ہمسائیگی کی اصول سکھانا چاہیے لیکن وہ یہ بھول گئے انھوں نے یمنی بے گناہ بچوں کا قتل عام کر کے خوب حق ہمسائیگی ادا کیا ہے ،قابل ذکر ہے انھوں نے اپنے تقریر کے دوران کہا کہ 1937ء کے معاہدہ کے مطابق فلسطین کا قیام عمل میں لانا چاہیے اور اس  کی سرحدیں معین ہونا چاہیے (اس وقت تو غاصب صیہونی ریاست کا وجود بھی نہیں تھا)جبکہ انھیں1967ء کہنا چاہیے تھا ،اس کے علاوہ بھی وہ دس جگہوں پر بھول گئے۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम