Code : 481 1 Hit

علامہ امینی کی آخری تمنا

علامہ امینی نے ایک سرد آہ بھری اور فرمایا:ہادی جان! اس دنیا میں میری صرف ایک آرزو ہے اور وہ یہ کہ خداوندعالم مجھے ایک طویل عمر عطا کردے جس میں، میں اس دنیا اور مافیہا سے دور کسی بیابان میں ایک خیمہ لگاکر رہوں اور مولیٰ الموحدین امیر المؤمنین علیہ السلام کی مظلومت پر تا عمر گریہ کرتا رہوں۔

ولایت پورٹل: صاحب الغدیر علامہ امینی کے بیٹے حجۃ الاسلام والمسلمین ڈاکٹر جناب محمد ہادی امینی نقل کرتے ہیں کہ میں نے اپنے والد علام کی زندگی کے آخری دنوں میں آپ سے یہ سوال کیا: بابا آپ نے اتنے برس خدمت دین اور خدمت ولایت کی اور اپنی زندگی کو اہل بیت(ع) کی منشا کے مطابق بسر کی۔ کیا اب بھی آپ کے دل میں کوئی تمنا اور آرزو پائی جاتی ہے؟
علامہ امینی نے ایک سرد آہ بھری اور فرمایا:ہادی جان! اس دنیا میں میری صرف ایک آرزو ہے اور وہ یہ کہ خداوندعالم مجھے ایک طویل عمر عطا کردے جس میں، میں اس دنیا اور مافیہا سے دور کسی بیابان میں ایک خیمہ لگاکر رہوں اور مولیٰ الموحدین امیر المؤمنین علیہ السلام کی مظلومت پر تا عمر گریہ کرتا رہوں۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम