Code : 755 3 Hit

دنیا و آخرت کا تضاد کیسے حل ہو؟

اسلام کے بہت سے آثار میں اس بات کی وضاحت ہوئی ہے بلکہ اسلام کی ضروریات و مسلمات میں سے ہے کہ دنیا و آخرت دونوں ایک ساتھ جمع ہوسکتی ہیں اور دونوں سے ایک ساتھ استفادہ کرنا ممکن ہے البتہ دونوں کو ایک ساتھ مقصد حقیقی قرار دینا ناممکن ہے۔

 ولایت پورٹل: بعض دینی آثار سے دنیا و آخرت کے درمیان تضاد کی بو آتی ہے۔مثلاً کہا جاتا ہے کہ دنیا وآخرت سوتن کے مثل ہیں کہ جن میں آپس میں کبھی نہیں بنتی۔یا یہ کہا جاتا ہے کہ یہ دونوں مشرق و مغرب کی طرح ہیں کہ جن کی قربت عین دوری ہے۔
کس طرح ان تعبیرات و اصطلاحات کی توجیہ کی جائے کہ جس سے بیان میں تعادل و ہماہنگی پیدا ہوجائے ؟
اس سوال کے جواب میں ہم کہتے ہیں کہ اولاً اسلام کے بہت سے آثار میں اس بات کی وضاحت ہوئی ہے بلکہ اسلام کی ضروریات و مسلمات میں سے ہے کہ دنیا و آخرت دونوں ایک ساتھ جمع ہوسکتی ہیں اور دونوں سے ایک ساتھ استفادہ کرنا ممکن ہے البتہ دونوں کو ایک ساتھ مقصد حقیقی قرار دینا ناممکن ہے۔
دنیا سے استفادہ کرنے کا لازمہ آخرت سے محرومیت نہیں ہے بلکہ آخرت سے محرومیت کا سبب تباہ کن گناہ ہوتے ہیں نہ کہ عیش و آرام اور پاک و حلال نعمتوں کا استعمال ،جس طرح کہ تقویٰ ،عمل صالح، ذخیرۂ آخرت دنیا سے محرومیت کا سبب نہیں ہے بلکہ اس کے دوسرے اسباب ہیں۔ بہت سے پیغمبر، امام اور اللہ کے نیک و صالح بندے گذرے ہیں کہ جن کی خوبیوں میں کسی قسم کے شک کی گنجائش نہیں ہے اور انھوں نے دنیا کی حلال نعمتوں سے خوب استفادہ کیا ہے۔
اس کے باوجود اگر یہ فرض بھی کرلیا جائے کہ بعض جملوں سے دنیا و آخرت دونوں کے ایک ساتھ استعمال میں تضاد ہے تو یہ دلیل قطعی کے مخالف ہے اور قابل قبول نہیں ہے۔
ثانیاً اگر ان تعبیرات میں صحیح طریقہ سے غور کیا جائے تو اس سلسلہ میں ایک لطیف فکر سامنے آئے گی اور ان تعبیرات وقطعی اصول کے درمیان کسی قسم کے منافات باقی نہیں رہ جائے گی اس فکر کی وضاحت کے لئے ہم ایک چھوٹا سا مقدمہ پیش کرنا ضروری سمجھتے ہیں اوروہ یہ کہ یہاں تین قسم کے رابطے موجود ہیں جن کی تحقیق کی جائے۔
۱۔دنیا وآخرت سے استفادہ کے درمیان رابطہ ۔
۲۔دنیا وآخرت کو مقصد وہدف بنانے کے درمیان رابطہ۔
۳۔ایک کو مقصد قرار دینے اور دوسرے سے استفادہ کرنے کے درمیان رابطہ۔
پہلے رابطہ میں کسی قسم کا تضاد نہیں ہے ۔لہٰذا دونوں کو جمع کرنا ممکن ہے۔
دوسرے رابطہ میں تضاد موجود ہے اور دونوں کو جمع کرنا ممکن نہیں ہے۔
لیکن تیسرے رابطہ میں یک طرفہ تضاد ہے یعنی دنیا کو مقصد اور ہدف اصلی بنائے اور آخرت کا بھی حامل ہو تو اس میں تضاد ہے لیکن آخرت کو مقصد وہدف بنائے اور آخرت کا بھی حامل ہو تو اس صورت میں تضاد نہیں ہے۔
 


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम