Code : 426 2 Hit

تعصب چھوڑ،ایران کے ساتھ مل کر بیت المقدس کی آزادی کے لئے آگے آئے سعودی عرب: شام کے مفتی اعظم

شام کے مفتی اعظم نے آل سعود پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ:انہوں نے تو کعبہ کو کالا لباس پہنا دیا ہے لیکن وہ ساری دنیا میں مسلمانوں کا خون بہاتے پھر رہے ہیں ،کعبہ کے دروازوں کو تو سونے سے سجا رکھا ہے لیکن عام مسلمانوں کے گھر اجاڑ رہے ہیں ،سعودی عرب 4، 4 ارب ڈالر کے خرید رہا ہے کس کے لئے؟وہ اسرائیل سے بھی دور ہے اور اس غاصب ریاست سے اس کی کوئی دشمنی بھی نہیں ہے؟

ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق دمشق کے مفتی اعظم شیخ حسون نے عراق کے النجباء چینل سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب مغربی ممالک سے ہر سال اربوں ڈالر کے ہتھیار خریدتا ہے اور کہتا ہے کہ اس نے یہ ہتھیار ایران سے مقابلہ کرنے کے لئے خریدے ہیں۔
شام کے معروف اہل سنت عالم شیخ حسون نے آل سعود سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امت مسلمہ کے سامنے یہ وضاحت دستاویزی صورت میں پیش کرے کہ ایران نے کبھی کسی مسلم ملک کے خلاف کاروائی کی دھمکی دی ہو؟بلکہ ہمیں تو پوری تاریخ یہ بتاتی ہے کہ اسلامی انقلاب کی کامیابی کے بعد ایران نے کبھی کسی مسلم ملک کی عالمی پیمانہ پر نہ مخالفت کی ہے اور نہ اس کے خلاف کوئی اقدام کیا ہے؟بلکہ انہوں نے تو یہاں تک کہا ہے کہ اسلامی انقلاب کے بعد تہران میں واقع شاہ کے دور حکومت کی یادگار،اسرائیلی سفارتخانہ کو ایران نے  فلسطین کے حوالہ کیا ہے اور اسی کے بعد سے آج تک کسی سعودی حکمران نے ایران کا دورہ بھی نہیں کیا۔
شام کے مفتی اعظم شیخ حسون نے آل سعود کی حقیقت سے پردہ اٹھاتے ہوئے عجیب انکشاف کیا ہے کہ جب شاہ ایران نے رسول خدا(ص) کا خط پھاڑنے والے کسری کی 2000 ویں سالگرہ کے موقع پر اس زمانے کے سعودی حاکم کو مدعو کیا تو وہ اس غیر اسلامی تقریب میں شرکت کرنے کے لئے دوڑے ہوئے چلے آئے لیکن جب امام خمینی(رح) نے رمضان کے آخری جمعہ کو یوم قدس کے لئے منتخب کرنے کے لئے سعودی عرب کے حاکم کو تہران بلایا تو اس نے دعوت نامہ کو ٹھکرادیا۔
شام کے مفتی اعظم نے صلاح الدین ایوبی کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ صلاح الدین نے مصر اور شام کے مسلمانوں کو متحد کر قدس کو فتح کرلیا تھا ۔اور میرا دعویٰ ہے کہ اگر آج سعودی عرب اور ایران متحد ہوجائیں تو قدس صرف کچھ  ہی دن میں آزاد ہوجائے گا۔
شیخ حسون نے خطہ میں سعودی عرب کی منفی پالیسوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہا کہ آل سعود، حکومت کے نشے میں یہ بھی بھول بیٹھے ہیں کہ انہیں ایک دن مرنا ہے اور اللہ کے یہاں جواب دینا ہے تو یہ کیسے اللہ اور اس کے رسول (ص) کو منھ دکھائیں گے؟
کیا انہوں نے رسول اللہ(ص) کی حدیث کو بھولا دیا ہے جس میں آپ نے فرمایا تھا کہ اللہ کے لئے کعبہ کے ایک ایک پتھر کو الگ کرنا میرے لئے آسان ہے لیکن مجھے کسی کا ناحق خون بہانا گوارا نہیں ہے۔
آل سعود نے تو کعبہ کو کالا لباس پہنا دیا ہے لیکن وہ ساری دنیا میں مسلمانوں کا خون بہاتے پھر رہے ہیں ،کعبہ کے دروازے کو تو سونے سے سجا رکھا ہے لیکن عام مسلمانوں کے گھر اجاڑ رہے ہیں ،سعودی عرب 4، 4 ارب ڈالر کے خرید رہا ہے کس کے لئے؟وہ اسرائیل سے بھی دور ہے اور اس غاصب ریاست سے اس کی کوئی دشمنی بھی نہیں ہے؟

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम