Code : 1226 37 Hit

امریکہ کسی کو کیا دہشتگرد قرار دےگا وہ خود دہشتگرد ہے:خطیب جمعہ تہران

امریکہ کے موجودہ صدر اپنی انتخابی مہم کے دوران اس بات کا اعتراف کرچکے ہیں کہ داعش، القاعدہ اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کی تشکیل میں امریکہ اور سعودی عرب کا اہم کردار ہے۔

ولایت پورٹل:اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ آیت اللہ امامی کاشانی کی امامت میں منعقد ہوئی ،جس میں لاکھوں مؤمنین نے شرکت کی، تہران میں نماز جمعہ کےخطیب نے ایرانی سپاہ کے خطے میں مثبت اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا ایرانی سپاہ اور مسلح افواج کے مثبت اقدامات کا مشاہدہ کررہی ہے ،جبکہ امریکی فوج کی دنیا میں بربریت اور دہشت گردی کا سلسلہ جاری ہے، خطیب جمعہ نے کہا کہ ایران کی مسلح افواج نے عراقی اور شامی حکومتوں کی درخواستوں پر مثبت جواب دیکر خطے میں امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی جاری دہشت گردی کو ختم کرنے میں اہم کردار ادا کیا، یہی وجہ ہے کہ شام اور عراق کی حکومتیں اور عوام ایرانی سپاہ کے شکر گزار ہیں جنھوں نے ان کی بر وقت مدد کرکے انھیں دہشت گردی کے ناسور سے نجات دلائی،آیت اللہ امامی کاشانی نے امریکہ کی طرف سے سپاہ کو دہشت گردی کی فہرست میں شامل کرنے کے اقدام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ دوسروں کو دہشت گرد قراردینے کی پوزیشن میں نہیں ہے کیونکہ خود امریکہ کے موجودہ صدر (ٹرمپ ) اپنی انتخابی مہم کے دوران اس بات کا اعتراف کرچکے ہیں کہ داعش اور القاعدہ اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کی تشکیل میں امریکہ اور سعودی عرب کا اہم کردار ہے ، امریکہ خود دہشت گرد ہے، امریکی فوج عالمی اور علاقائی سطح پر دہشت گردوں کو مددفراہم کررہی ہے ،خطے میں امریکہ کے اتحادی ممالک بھی دہشت گردوں کو مدد فراہم کررہے ہیں، سعودی عرب کے شہری دہشت گرد تنظیموں کے کمانڈر ہیں ، سعودی عرب اور اسرائیل مشترکہ طور پر علاقائی ممالک میں عدم استحکام پیدا کرنے کے لئے دہشت گردوں کی پشت پناہی کررہے ہیں ، دہشت گردوں سے جتنے بھی ہتھیار ضبط کئے گئے ہیں وہ سب امریکی اور اسرائیلی ہیں،خطیب جمعہ نے سعودی عرب میں 37 شیعہ مسلمانوں کے سر قلم کرنے کے واقعہ کو سنگین اور بھیانک جرم قراردیتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب اور اسرائیل کے وحشیانہ اور مجرمانہ جرائم میں امریکہ برابر کا شریک ہے امریکی صدر ٹرمپ نے آل سعود کی حمایت کرکے اپنا مکروہ چہرہ دنیا کے سامنے پیش کردیا ہے۔
مہر


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम